تازہ ترین

سحر ی اور افطاری کے وقت بجلی کٹوتی

نٹی پورہ علاقہ میں عوام کومشکلات کا سامنا

تاریخ    16 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
 سرینگر//ماہ رمضان کے چلتے شہر کے نٹی پورہ علاقہ میںسحر ی اور افطاری کے وقت بجلی کی کٹوتی سے عوام کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس پر صارفین میںمحکمہ بجلی کے خلاف غم وغصے کا لاوا پک رہا ہے۔مقامی لو گوں نے بتایا کہ نٹی پورہ اور اس کے مضا فاتی علاقوں میں ا فطاری سے قبل دس منٹ بجلی کٹ کی جاتی ہے اور تقریبا ً آ ٹھ بجے بجلی دوبارہ بحال کی جاتی ہے اور تراویح کے دوران بھی بجلی کی آ نکھ مچو لی جاری رہتی ہے۔ اسی طر ح سحر ی کے وقت ساڑھے تین بجے بجلی گل ہو جاتی ہے اور سحر ی ختم ہونے کے بعد بجلی بحال کی جاتی ہے۔اس صورتحا ل کی وجہ سے رو زداروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ شبیرا حمد نامی ایک شہر ی نے الزام عائد کیا کہ علاقہ کو چھانہ پورہ گر یڈ سے بجلی سپلائی ہوتی ہے اور متعلقہ گرڈ اسٹیشن پرتعینات انجینئروں اورملازمین کی مرضی پرمنحصر ہے کہ وہ کب بجلی سپلائی منقطع کریں اورکب اس کوبحال کریں ۔انہوں نے مزیدکہاکہ ماہ دسمبر2020سے ہم روزانہ دیکھتے اورسہتے آرہے ہیںکہ بجلی ملازمین کوجب مرضی ہوئی ،انہوںنے علاقہ کی بجلی سپلائی کاٹ دی ۔انہوںنے بتایاکہ اب ماہ مبارک ہے اورہمیں بجلی کی آنکھ مچولی اوربے تحاشہ کٹوتی کی وجہ سے سخت مشکلات درپیش ہیں ۔انہوں نے بتایاکہ سحری اورافطار کے اوقات جب بجلی انتہائی ضروری ہوتی ہے ،اُسوقت بھی یہاں بجلی سپلائی کاٹ دی جاتی ہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ بجلی کے چیف انجینئرسے اپیل کی کہ وہ ماہ مبارک کے احترام کوملحوظ نظررکھ کر ماتحت ملازمین وانجینئروں کوہدایت دیں کہ مہجور نگرنٹی پورہ کے لوگوںکوکم سے کم اس مقدس مہینے میںدرعذاب نہ رکھاجائے ۔