مغل شاہراہ کو جلد ٹریفک کیلئے کھولنے کی مانگ | سڑک آمد ورفت کیلئے تیار ، حکم کے منتظر :ڈی سی

تاریخ    13 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


عشرت حسین بٹ
پونچھ//خطہ پیر پنچال کی عوام نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ تاریخی مغل شاہراہ پر جلدازجلد ٹریفک کو بحال کیا جائے تاکہ خطہ کے طلباء و مریضوں کیساتھ ساتھ تاجروں کو دورپیش مسائل حل ہو سکیں ۔غور طلب ہے کہ گزشتہ دنوں مغل شاہراہ پر تعینات میکینکل شعبہ نے برف اور پسیوں کے ملبے کو ہٹا لیا تھا جبکہ اب شاہراہ آمد و رفت کے قابل ہے تاہم ابھی تک انتظامیہ کی جانب سے گاڑیوں کی بحالی کے سلسلہ میں کوئی حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا ہے ۔ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ نے بتایا کہ مغل شاہراہ اب ٹریفک کی آمد ورفت کے قابل ہے تاہم اعلیٰ حکام کی جانب سے ٹریفک کی بحالی کیلئے کوئی حکم نہیں دیا گیا ہے جس کی وجہ سے وہ بھی حتمی فیصلے کے منتظر ہیں ۔واضح رہے کہ تاریخی مغل شاہراہ ہر برس سردیوں میں شدید بارف باری کی وجہ سے آمد ورفت کیلئے بند ہو جاتی ہے اور چار ماہ تک بند رہنے کے بعد انتظامیہ کی جانب سے شاہراہ کو قابل آمد ورفت بنایا جاتا ہے ۔ خطہ پیر پنچال کے لوگوں نے سرکار سے اپیل کی ہے کہ سڑک کو گاڑیوں کی آمدو رفت کیلئے جلد ازجلد کھولا جائے تاکہ جموں سرینگر شاہراہ سے خطہ کے لوگوں کو سفر نہ کرنا پڑے ۔وادی کے متعدد ملازمین جو کہ خطہ پیر پنچال میں اپنی نوکری سر انجام دیتے ہیں جبکہ خطہ پیر پنچال کے بھی لوگ ملازمت کے سلسلے میں وادی ہوتے ہیں جنہیں آنے جانے میں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ساتھ ہی ساتھ متعدد ایسے مریض بھی ہیں جن کا علاج و معالجہ بھی وادی کے ہسپتالوں میں چلتا ہے۔محمد یونس نامی ایک مریض جن کا تعلق ضلع پونچھ کے چنڈک علاقہ سے ہے،نے بتایا کہ ان کو ہر دوماہ میں علاج معالجہ کے سلسلہ میں کشمیر جانا پڑتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ وہ گزشتہ دو برسوں سے کینسر میں مبتلا ہیں تاہم مغل شاہراہ کے بند ہونے کی وجہ سے ان کو جموں سرینگر شاہراہ کے ذریع ہی سفر کرنا پڑتا ہے ۔ ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اندرجیت نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ سڑک سے پورے طور پر برف ہٹا لی گئی ہے اور سڑک کو گاڑی چلانے کے قابل بنا دیا گیا ہے ان کا کہنا تھا کہ جیسے ہی اعلیٰ حکام کی جانب سے ہری جھنڈی ملے گی شاہراہ کو ٹریفک کیلئے کھول دیا جائے گا ۔
 

تازہ ترین