گرلز مڈل سکول محلہ کھوکھراں گوہلد کا دہائیوں سے درجہ نہ بڑھ سکا | ادارے کی اراضی پر ناجائز قبضہ مسلسل جاری ،طلباء کی پڑھائی متاثر

تاریخ    13 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


جاوید اقبال
مینڈھر //سب ڈویژن مینڈھر کے گوہلد علاقہ میں قائم گورنمنٹ مڈل سکول محلہ کھو کھراں کا درجہ گزشتہ 6دہائیوں سے بڑھایا ہی نہیں گیا جس کی وجہ سے علاقہ کی اکثر بچوں کی تعلیم بُری طرح سے متاثر ہورہی ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ مذکورہ سکول 1965سے قبل قائم کیا گیا تھا تاہم اس دور میں مکتوب کے طور پر چلایا جارہا تھا تاہم 1965کے بعد اس کو گرلز مڈل سکول کا درجہ دیا گیا تاہم آج تک سکول کا درج بڑھا کر ہائی سکول نہیں کیا جاسکا جس کی وجہ سے علاقہ کے بچوں کو اپنی تعلیم مکمل کرنے میں کئی طرح کے مسائل کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ سکول کا درجہ بڑھانے کی مانگ کے سلسلہ میں انہوں نے کئی مرتبہ اعلیٰ حکام و علاقہ کے منتخب نمائندوں سے بھی ملا قاتیں کی تاہم صرف یقین دہانیوں سے ہی کئی دہائیاں گزار دی گئی ہیں لیکن سکول جوں کا توں ہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ سکول کے نام پر کل 23کنال اراضی کا اندراج کیا گیا ہے لیکن اس وقت موقعہ پر محض 16کنال تک کی اراضی بچی ہوئی ہے جبکہ باقی اراضی پر ملحقہ علاقہ میں رہائش پذیر لوگوں نے ناجائز قبضہ کر کے رکھا ہوا ہے ۔انہوں نے محکمہ مال کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ کئی مرتبہ سکول کی اراضی سے ناجائز قبضہ ہٹانے کیلئے مہم چلائی گئی تاہم اس کے باوجود بھی اراضی کو مکمل طورپر وگزار نہیں کروایا جاسکا ۔مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ گورنمنٹ گرلز مڈل سکول کا درجہ بڑھا کر ہائی سکول کیا جائے تاکہ علاقہ کے بچوں کو معیاری تعلیم حاصل ہو سکے اور سکول کی اراضی پر کئے گئے غیر قبضہ کو جلداز جلد ہٹایا جائے ۔
 

تازہ ترین