تازہ ترین

جنوبی کشمیر میں دو معرکہ آرائیاں،7جنگجو جاں بحق

تاریخ    9 اپریل 2021 (21 : 12 PM)   
(Representational file pic)

نیوز ڈیسک
سرینگر//جنوبی کشمیر کے شوپیان اور ترال علاقوں میں جمعہ کو فورسز کے ساتھ دو معرکہ آرائیوں کے دوران سات جنگجو جاں بحق ہوگئے۔ ان میں سے تین جنگجوگذشتہ شات دیر گئے جبکہ چار آج صبح سے جاری جھڑپوں میں جاں بحق ہوگئے۔
جنوبی قصبہ شوپیان میں گذشتہ شام شروع ہوئی معرکہ آرائی آج دو مزید جنگجوﺅں کی ہلاکت پر ختم ہوگئی۔یہاں گذشتہ سہ پہر جنگجوﺅں اور فورسز کے مابین معرکہ آرائی شروع ہوئی تھی۔
مقامی ذرائع کے مطابق آج صبح سویرے محصور جنگجوﺅں اور فورسز کے مابین ایک بار پھر گولی باری کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے جس سے سارا علاقہ لرز اٹھا۔
یہ معرکہ آرائی جمعرات کی شام اُس وقت شروع ہوگئی جب فورسز اور پولیس کی ایک مشترکہ ٹیم نے قصبہ کے جان محلہ میں تلاشی کارروائی شروع کی۔
اس دوران چھپے جنگجوﺅں نے فورسز پارٹی پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین میں باضابطہ معرکہ چھڑ گیا۔پولیس ذرائع کے مطابق محصور جنگجوﺅں کو سرنڈر کرنے کی پیشکش کی گئی جوانہوں نے ٹھکرادی۔
پولیس نے جمعہ کو دعویٰ کیا کہ جنوبی کشمیر کے ترال میں بھی فورسز نے ایک جنگجو مخالف آپریشن کے دوران دو جنگجوﺅں کو جاں بحق کیا۔ پولیس کے مطابق مہلوک جنگجوﺅں میں انصار غزوة الہند نامی تنظیم کا چیف کمانڈر امتیاز شاہ بھی شامل ہے۔
پولیس نے ایک ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ انصار غزوة الہند کا چیف کمانڈر امتیاز شاہ ترال میں مارے گئے دو جنگجوﺅں میں شامل ہے۔
قابل ذکر ہے کہ پولیس نے گذشتہ شام دعویٰ کیا تھا کہ امتیاز شاہ جنوبی قصبہ شوپیان میں جاری فورسز آپریشن کے دوران محصور ہے جہاں ابھی تک معرکہ آرائی میں تین جنگجو جاں بحق ہوگئے ہیں۔
یہ معرکہ آرائی ترال قصبہ سے تین کلو میٹر دورنئی بھگ اور امیر آباد کے درمیان کھیت میں جمعہ کی صبح ساڑھے سات بجے کے قریب گولیوں کے تبادلے کے ساتھ ہی شروع ہوگئی تھی۔

تازہ ترین