تازہ ترین

بتہ مالو صاحب کا عرس

روح پرور مجالس آراستہ ،بٹہ مالو میں گہماگہمی

تاریخ    9 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


سٹی رپورٹر
سرینگر// بلند پایہ ولی کامل حضرت شیخ داوودؒالمعروف بتہ مول صاحب کا عرس نہایت ہی عقیدت اورجوش و خروش سے منایا گیا۔جمعرات کو عقیدت مندوںکی ایک بڑی تعداد نے بٹہ مالو میں حضرت شیخ داود ؒکے آستان پر حاضری دی۔ اس دوران کورونا رہنما خطوظ پر عمل پیرا ہوکر عقیدت مندوںنے حاضری دی اوریہاںختمات امعظمات کی مجلس میں شرکت کی۔اس دوران علماء  دین نے بتہ مالو صاحب کی سیرت اور ان کے کمالات پہ روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ موجودہ دور میں ہمیںبتہ مالو صاحب کی تعلیم کو اپنانا ہوگی اور تب بھی ہم کامیاب ہوسکتے ہیں۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ یہ عرس ہمیشہ کی طرح علاقے میں ایک تہوار کی طرح منایا جاتا ہے اور اس دن مقامی شہری اپنے رشتہ داروں کو بھی اس میں شرکت کے لئے مد عو کرتے ہیں۔ حضرت شیخ داوودؒ جوبتہ مول صاحب کے نام سے مشہور و معروف ہیں ایک نہایت ہی پرہیز گار اور دین پرست آدمی تھے۔حضرت شیخ دائود(رح) صبرو قناعت کے دلدادہ تھے، آپ حصول معاش کیلئے کھیتی باڈی کرتے تھے اور خود ہل چلاتے تھے اور صرف سبزیاں نوش فرماتے تھے۔ بتایا جاتا ہے کہ بتہ مول صاحب کی زندگی میں جب شہر سرینگر میں قحط سالی تھی تو وہ ایک بہت بڑے برتن میں کھانا تیار کرواتے تھے جس سے لوگوں کی ایک بری تعداد سیر ہوجاتی تھی۔ تب سے یہ دن بتہ مول صاحب کے عرس کے نام سے منایا جاتا ہے او راس دن مختلف قسموں کے پکوان تیار کئے جاتے ہیںاور یہاںدور دور سے آئے عقیدت مندوں اور مہمانوں کو کھلائے جاتے ہیں۔علی محمد نامی ایک شہری نے بتایاکہ عرس کے دوران یہاں گھروں میں خاص پکوان تیار کئے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عرس شروع سے اڑھائی دن قبل اور عرس کے اڑھائی دن بعد یعنی5روز تک یہاں گھروں میں گوشت ،مرغ اور مچھلیاں نہیں پکائی جاتی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ عرس کے دوران یہاں گھروں میں پنیر ،انڈے ،ندرو،دودھ دال اورخشک شلغم کے حلقے(گوگجی آرہ )کے پکوان تیار کئے جاتے ہیں اور دوستوں اور رشتہ داروں کو دعوت دی جاتی ہے۔ زیارت کے ارد گرد خصوصی مارکیٹ لگائے گئے ہیں اورخوانچہ فروشوں نے زیارت کے گردو نواح میں اپنی دکانیں سجا ئی ہیں۔
 

تازہ ترین