تازہ ترین

نائب صدر کے دورہ جموں سے قبل آئی آئی ایم جموں میں کووڈ 19کے19معاملات سامنے آئے

سائنس کالج میں 27 تازہ کیس ، سنسکرت کالج میں بھی 14 مثبت، دونوں کالج و گرد و نواح مائیکرو کنٹینمنٹ زو ن قرار

تاریخ    9 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


سید امجد شاہ
 جموں// انڈین انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ (آئی آئی ایم) جموں کے سالانہ کانووکیشن،جس میں نائب صدر وینکیا نائیڈو کل مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کرنے والے ہیں، سے ایک روز قبل محکمہ صحت نے ادارے میں کم ازکم19کورونا مثبت معاملات کا پتہ چلایا ہے ۔ایک عہدیدار نے بتایا کہ سالانہ کانووکیشن کا انعقاد کنونشن سینٹرکینال روڈ جموں میں کیا جائے گا جو 9 اپریل 2021 (جمعہ) کو صبح 10:30 بجے شروع ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ اس کانووکیشن پر کوئی اثر نہیں پڑے گا اوریہ تقریب ہوگی شیڈول کے مطابق منعقد کی جائیگی جبکہ صرف منفی کووڈ رپورٹ کے ساتھ لوگوں (طلباء اور عملے کے ممبران) کو شرکت کی اجازت ہوگی۔محکمہ صحت کے عہدیداروں نے بتایا کہ انھوں نے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ (آئی آئی ایم) جموں میں 188 افراد کے نمونے لینے کے دوران طلباء اور عملے کے ممبروں کے 19 مثبت واقعات کا پتہ چلا یاہے۔ ادھر آئی آئی ایم جموں کے عملے کے 72 ممبران اور طلباء کی نمونہ رپورٹ ابھی باقی ہے۔ عہدیدار نے مزید کہا "آر ٹی پی سی آر کی رپورٹ رات کے وقت آسکتی ہے" ۔ ملک کے نائب صدر وینکیا نائیڈو آئی آئی ایم جموں کے سالانہ کانووکیشن میں بطور مہمان خصوصی شرکت کریں گے جبکہ پی ایم او میں وزیر مملکت ڈاکٹر جتندر سنگھ اور لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا بھی تقریب میں شریک ہوں گے۔دریں اثناء ڈپٹی کمشنر جموں انشول گرگ نے ضلع کے دو کالجوں سے کوویڈ معاملات میں اضافے کے بعد دو مائیکرو کنٹینمنٹ زونز کا اعلان کیا ہے۔ڈی سی جموں نے بتایا’’ جی جی ایم سائنس کالج کینال روڈ ، جموں اور اس کے آس پاس کے علاقے اور سنسکرت یونیورسٹی کے آس پاس اور کنگر مورہ ، بھلوال تحصیل کو بالترتیب پولیس اسٹیشن نو آباد اور گھروٹا میں واقع مائیکرو کنٹینمنٹ زون قرار دیا گیا ہے۔ڈی سی جموں ، جو ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (ڈی ڈی ایم اے) کی چیئرپرسن بھی ہیں ، نے کہا کہ ان مقامات پر مائیکرو کنٹینمنٹ زونز کو کوڈ 19 کے مزید پھیلاؤ پر قابو پانے کے لئے سخت لاک ڈائون نافذ ہوگا۔ڈی سی جموں کی طرف سے جاری کردہ ایک آرڈر میں کہا گیا ہے کہ "ان دو مقامات پر ، فوری طور پر روک تھام کے لئے سی آر پی سی کی دفعہ 144 کے تحت آگے بڑھنے کی کافی گنجائش موجود ہے یا انسانی جان ، صحت اور حفاظت کو درپیش خطرات سے بچنے کے لئے فوری تدارک ضروری ہے۔"انہوں نے کہا کہ انھوں نے بھی پتہ لگائے گئے کیسوں کی جارحانہ رابطہ کا سراغ لگانا شروع کردیا ہے اور انہیں وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لئے الگ تھلگ کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ "ہم نے ضلع جموں کے 20 سے 22 تعلیمی اداروں / کالجوں میں’ سویپ ٹیسٹنگ ‘شروع کردی ہیں۔ ہم معیاری آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پی) کے مطابق ایسے اداروں کو بند کرتے ہیں جہاں بھی ہمیں پانچ مثبت کوڈ 19 معاملات کا پتہ چلتا ہے۔ ایک اور حکم میں ڈپٹی کمشنر جموں نے نمائشوں اور میلوں کے انعقاد کے لئے جاری کردہ تمام اجازتیں منسوخ کردی ہیں۔حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ "ان نمائشوں کے منتظمین 24 گھنٹوں کے اندر اپنی کاروائیاں ختم کردیں گے اور متعلقہ سب ڈویڑنل مجسٹریٹ ڈپٹی کمشنر کے دفتر میں تعمیلی رپورٹ پیش کریں گے۔ادھر ادھم پور میں 35 مثبت واقعات سامنے آئے ہیں جن میں بی ایس ایف کے 20 اہلکار (ٹرینی) اور 8 مقامی مسافر شامل ہیں۔ ایک حاملہ عورت 7 مقامی متاثرہ افراد میں شامل ہے ، پہلے سے ہی متاثرہ شخص کا ایک رابطہ اور دوسرے معاملے کا بے ترتیب نمونے لینے کے دوران پتہ چلا۔ محکمہ صحت کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ: "جی جی ایم سائنس کالج میں مزید25مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں دو نئے طلباء اور 25 پہلے ہی متاثرہ 34 عملے کے ممبروں کے رابطے میں آنے والے لوگ شامل ہیں"۔عہدیدار نے بتایا کہ سنسکرت کالج سے ایک ہفتہ پہلے ہی 14 مثبت واقعات سامنے آئے تھے اور اسی وجہ سے آج بھی اس کالج کے ارد گرد کے علاقے کو مائیکرو کنٹینمنٹ قرار دیا گیا ہے۔
 

تازہ ترین