تازہ ترین

جائیداد ٹیکس کی ادائیگی

جموں میونسپل کارپوریشن کا عملدرآمدمو خر کرنیکا فیصلہ

تاریخ    7 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


سیدامجدشاہ
جموں//جمو ں میونسپل کارپوریشن کے جنرل ہاوس نے کارپوریٹروں اور جموں کے لوگوں کے سخت ناراضگی کے بعد جائیداد پر ٹیکس عائد کئے جانے کو ملتوی کیاہے۔جموں میونسپل کارپوریشن کے میئر چندرموہن گپتا نے کہا،”ہم نے جائیداد پرٹیکس عائد کئے جانے کو ملتوی کیا ہے ۔عام لوگ اور چیمبرآف کامرس اینڈانڈسٹری اس کے خلاف ہیں ۔اس لئے اس پر عمل درآمد کرناٹھیک نہیں ہے“۔جنرل ہاوس کی میٹنگ کارپوریشن میں طلب کی گئی تھی اور اس میں تمام کارپوریٹروں نے شرکت کی اوران میں سے متعدد نے جائیداد پرٹیکس عائد کئے جانے کی کسی بھی کوشش کے خلاف کھڑے ہوکت مخالفت کی۔گپتا نے کشمیرعظمیٰ کو بتایا ،”پٹرول ،ڈیزل اور رسوئی گیس اور دیگر اشیائے ضروریہ کی قیمتیں پہلے ہی زیادہ ہیں اور اس صورتحال میں جموں کے لوگوں پرمزید بوجھ ڈالنا مناسب نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں جائیدادپرٹیکس عائد کئے جانے پر عملدرآمد کو ملتوی کرنے فیصلہ کیا گیاہے۔پکاڈنگا وارڈنمبر4کی کارپوریٹر سنیتا کول نے کہا کہ سبھی کارپوریٹروں نے پارٹی مناسبت سے بالاتر ہوکر جموں میں جائیداد پرٹیکس عائد کئے جانے کے خلاف اتحاد کیا ۔ہم اس کی عملدرآمد کی اجازت نہیں دیں گے ۔سنیتا کول بھاجپا کی رہنما ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ لوگ پہلے ہی اشیائے ضروریہ کے اونچے داموں سے پریشان ہیں اوراس لئے ہم نے متفقہ طور فیصلہ کیا کہ اس پر عمل نہیں کیاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے سو سے زیادہ آٹوڈرائیوروں کا مسئلہ بھی اُٹھایا جو جموں میونسپل کارپوریشن کے وارڈوں سے کوڑاکرکٹ اُٹھاتے تھے اور ان ڈرائیوروں کو گزشتہ چار ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے ۔ہم نے ان کی زیرالتواءتنخواہ کی ادائیگی کامطالبہ بھی کیا۔ایک اور کارپوریٹر ثوبت علی نے بتایا کارپوریٹرمیڈیا کو اس تقریب میں بلانے کے خلاف تھے،۔انہوں نے جان بوجھ کر یہ فیصلہ لیاتھا تاکہ جائیداد پر ٹیکس کے معاملے پر پریشانی کو ٹالاجائے۔اس کی بھاجپا کے کارپوریٹر مخالفت کررہے ہیں ۔گزشتہ روز بھاجپا نے اپنے کارپوریٹروں کو جائیداد پر ٹیکس کی مخالفت کرنے کو کہاتھا اگرچہ جموں میونسپل کارپوریشن کے میئر نے ماضی میں اس کے نفاذ کی یہ کہہ کر وکالت کی تھی کہ یہ جموں شہر کی ترقی کےلئے لازمی ہے۔
 

تازہ ترین