تازہ ترین

سرحدی گائوں ڈھوکری کے لوگ صاف پانی سے محروم

تاریخ    1 مارچ 2021 (34 : 12 AM)   


حسین محتشم
پونچھ//ضلع پونچھ کے دور دراز سرحدی گائوں ڈھوکری کے باشندوں کو پینے کا صاف پانی میسر نہ ہونے کی وجہ سے کئی طرح کی پریشانیوں  کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ گائوں کے لوگوں نے انتظامیہ سے جلد از جلد صاف پانی فراہم کرانے کی اپیل کی ہے۔مقامی لوگوں کے مطابق کئی سالوں سے انہیں پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے، جس کے نتیجے میں وہ دور دراز پہاڑی علاقوں سے گھر کے استعمال کے لئے پانی لانے پر مجبور ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ صاف پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے بیماریوں کے پھوٹنے کا بھی اندیشہ برابر بنا رہتا ہے کیونکہ علاقے میں لوگوں کو کھانے پینے کے لیے صاف پانی دستیاب ہی نہیں ہے۔مقامی لوگوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے ضلعی صدر کو ایک اجلاس کے دوران بتایا کہ انہوں نے متعدد دفعہ اس سلسلے میں انتظامیہ تک اپنے مسائل پہنچائے ہیں تاہم انہیں ہمیشہ نظر انداز کیا جاتا رہا ہے۔ ایک مقامی شخص نے بتایا " اس دور میں انسانی زندگی کی بنیادی ضرورت پانی سے محرومی سب سے بڑا المیہ ہے۔انہوں نے کہا ان کی ماں بہنوں کو پانی لانے کے لیے کافی مسافت طے کرنی پڑتی ہے۔انہوں نے کہاکہ انہیں اس بنیادی ضرورت سے محروم رکھا جارہا ہے۔انہوں نے رفیق چستی سے اپیل کی کہ وہ علاقے میں پانی کی سپلائی کو یقینی بنانے میں اپنا کردار ادا کریں تاکہ بستی کو مشکلات سے نجات مل سکے۔ رفیق چستی نے لوگوں کو یقین دلایا کہ ان کے تمام مطالبات پورے کئے جائیں گے۔انہوں نے اس دوران گائوں کی عوام کے لئے ذاتی خرچ پر ایک بورویل وقف کرنے کا بھی اعلان کیا تاکہ لوگوں کو عرصہ دراز سے درپیش پریشانیوں سے نجات حاصل ہوسکے۔
 

تازہ ترین