تازہ ترین

بالاکوٹ کو علیحدہ اسمبلی حلقہ بنایاجائے،عوام کا مطالبہ

تاریخ    1 مارچ 2021 (34 : 12 AM)   


جاوید اقبال
مینڈھر//سرحدی تحصیل بالاکوٹ کے عوام نے مانگ کی ہے کہ اس علاقے کو ایک علیحدہ اسمبلی حلقہ بنایاجائے۔مقامی لوگوں نے کہاکہ اس وقت بالاکوٹ میں سترہ پنچایتیں ہیں اور یہ وسیع علاقہ پر محیط ہے۔ان کاکہناتھاکہ مینڈھر حلقہ میں نوے ہزار سے زائد ووٹ ہیں اور بالاکوٹ کی آبادی بھی لگ بھگ پچاس ہزار ہے۔انہوں نے کہاکہ حد بندی کمیشن قائم کیاگیاہے جس کو نئے حلقے بنانے کا کام سونپاگیاہے لیکن اس میں بالاکوٹ کو کسی بھی صورت میں نظرانداز نہیں کیاجاناچاہئے اور اس علاقے کو الگ سے اسمبلی حلقہ بنایاجائے کیونکہ آج تک اس کی ترقی نہیں ہوسکی ہے اور سرحد پر واقع ہونے کی وجہ سے یہاں کے عوام نے صرف مشکلات اور مصائب ہی برداشت کئے ہیں۔ان کاکہناتھاکہ بالاکوٹ علیحدہ اسمبلی کیلئے مستحق بھی ہے اور 1965سے قبل یہ ایک تحصیل ہواکرتی تھی جسے پھرسال 2014میں دوبارہ سے تحصیل کادرجہ دیاگیا۔مقامی سیاسی و سماجی کارکنان کاکہناہے کہ سرحدی علاقہ ہونے کی وجہ سے بالاکوٹ کے مسائل بالکل مختلف ہیں جن کی طرف آج تک کسی نے کوئی توجہ نہیں دی اور نہ ہی ارباب اقتدار نے عوام کے مسائل کو حل کرنے کی سعی کی۔ان کاکہناہے کہ بالاکوٹ کا یہ حق بنتاہے کہ اسے نیا اسمبلی حلقہ بنایاجائے تاکہ اس علاقے کی ترقی ہوسکے۔نمبردار فیض محمد کاکہناہے کہ بالاکوٹ کے عوام نے گولیوں کی گن گرج میں زندگی بسر کی ہے اور انہیں دیگر سہولیات کا فائدہ اٹھانے کا موقعہ ہی نہیں دیاگیا۔ان کاکہناہے کہ یہاں کے مسائل کو حل کرنے کیلئے ضروری ہے کہ بالاکوٹ کو اسمبلی حلقہ بنایاجائے۔ماسٹر عنایت اللہ خان کاکہناہے کہ بچوں کی تعلیم بری طرح سے متاثر ہورہی ہے اور دیگر سہولیات بھی فراہم نہیں ،مجموعی مسائل کو دیکھتے ہوئے بالاکوٹ کو الگ سے اسمبلی حلقہ بنانا ناگزیر بن چکاہے۔
 

تازہ ترین