لوہر نکہ منجھاڑی پنچایت تمام تر بنیادی سہولیات سے محروم،عوا م کااحتجاج

دو لفٹ سکیمیں نامکمل،پانی نایاب،سڑک بھی تشنہ تکمیل،تعلیم کا حال بھی بے حال

تاریخ    22 فروری 2021 (00 : 01 AM)   


جاوید اقبال
 مینڈھر//سب ڈویژن مینڈھر کی سرحدی تحصیل بالاکوٹ کی پنچائت لوہر نکہ منجھاڑی تمام تر بنیادی سہولیات سے محروم ہے۔ علاقہ کے مردو خواتین نے بنیادی سہولیات کو لیکر محکمہ جل شکتی کے خلاف زورداراحتجاج کرتے ہوئے نعرے بازی کی ۔سماجی کارکن راجہ وسیم خان نے کہا کہ لوہر نکہ منجھاڑی پنچائت بڑی آبادی پر مشتمل ہے لیکن بنیادی سہولیات کا نام ونشان ہی نہیں ہے۔ انہوں نے ریاستی حکومت و ضلع انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ علاقہ کے اندر دو لفٹ سکیموں کا کام کئی برسوں سے چل رہاہے لیکن محکمہ کے اعلی حکام سکیموں کی طرف توجہ نہیں دے رہے ہیں اور کام کو ادھورا چھوڑ دیا گیا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ علاقہ کے اندر چشمے بھی بہت کم ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کو کئی کلومیٹر دور سے پانی لانا پڑتاہے اور محکمہ کے اعلی حکام سے کئی بار کہا گیا کہ پانی کی لفٹ سکیموں کو مکمل کیا جائے تاکہ لوگوں کو پینے کا صاف پانی دستیاب ہو سکے لیکن کروڑوں روپے سرکار کے خرچنے کے باوجود سکیمیں مکمل نہیں ہوئی اور لوگ پانی کی بوند بوند کیلئے ترس رہے ہیں ۔انکا کہنا تھا کہ علاقہ کے اندر سڑک بھی نہیں ہے جسکی وجہ سے لوگوں کو کاندھوں پر سامان اٹھاکر کئی کلومیٹر پیدل سفر کرنا پڑتاہے ایک سڑک جو علاقہ کے بیچوں بیچ سے دو کلومیٹر نکالی گئی ہے اسکا بھی زمینی سطح کا کام کرنے کے بعد سڑک کو چھوڑ دیا گیا جس کی وجہ سے اس پر گاڑیاں نہیں چل سکتی ۔انکا کہنا تھا کہ بڑی آبادی ہونے کے باوجود مڈل سکول کا درجہ بھی نہیں بڑھایا گیا جس کی وجہ سے طلباء تعلیم بھی کئی کلومیٹر پیدل سفر کرکے ہائیر سکینڈری سکول جاتے ہیں جو کہ ان کے لئے کافی مشکل ہے۔ اس سلسلہ میں جب محکمہ جل شکتی کے ایک اعلی آفیسر سے بات ہوئی تو انکا کہنا تھا کہ لوہر نکہ منجھاڑی کی ایک سکیم جلد چلائی جائے گی تاکہ لوگوں کو پینے کا صاف پانی مل سکے اور دوسری سکیم پر جلد کام شروع کیا جائے گا ۔
 

تازہ ترین