نئے جموں کشمیر کی تعمیر شروع ہوگئی

خطے کی ایک ایک انچ زمین کی رکھوالی کا ذمہ دار ہوں

تاریخ    27 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک

  امن و امان کی صورتحال بہتر، نئی اسکیموں اور پروجیکٹوں کا آغاز، آیوشمان بھارت سکیم نے انقلاب لایا

لیفٹیننٹ گورنر نے جموں میں پرچم لہرایا، مارچ پاسٹ پر سلامی، اجتماع سے خطاب

 
 جموں //لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کشمیر کو زمین کو ایک مقدس اور خوبصورت مقام قرار دیتے ہوئے کہا کہ دیہات اور قصبوں میں رہنے والے تمام لوگوں نے ایک نیا جموں و کشمیر تعمیر کرنا شروع کردیا ہے، ان کے اور قوم کے عزائم کو پورا کریں۔منوج سنہا نے یقین دلایا کہ پڑوسی ملک کی سیاسی سازشوں اور مذموم منصوبوں کو کبھی بھی کامیاب ہونے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔سکیورٹی کے سخت انتظامات کے درمیان سیاہ کاراکولی ٹوپی اور کالے رنگ کا سوٹ پہن کر ، سنہا نے شہر کے قلب میں واقع مولانا آزاد اسٹیڈیم میں ترنگا پھرایا ، پریڈ کا معائنہ کیا اور جموں و کشمیر لائٹ انفنٹری کے متاثر کن مارچ پاسٹ میں سلامی لی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ’’ایک طرف ہندوستان کے آئین اور دوسری طرف ترنگا ، گائوں اور قصبوں کے سبھی لوگوں نے ، جن کی نظر میں ترقی کا خواب ہے ، اپنے اور اپنے عوام کے عزائم کو پورا کرنے کے لئے ایک نیا جموں و کشمیر بنانا شروع کیا ہے‘‘ ۔انہوں نے کہا کہ 2020 جموں و کشمیر میں غیرمعمولی تبدیلی کا سال رہا ۔ انہوں نے کہا ، "تبدیلی کے ایک مستقل عمل کے ذریعے ، نئے جموں و کشمیر میں ترقی کی جڑیںلگائی گئیں ہیں۔انہوں نے کہا’’سکیورٹی ایجنسیوں نے تشدد پر مؤثر انداز میں قابو پالیا اور جو لوگ اس درپردہ جنگ کی مدد سے اپنے سیاسی مقاصد کو پورا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ،انہیں مناسب جواب دیا جارہا ہے‘‘۔انہوں نے کہا’’ جموں کشمیر کی فضائیں سنتوں کے الفاظ ہیں،اور اسکے پہاڑوں میں تصوف کی موسیقی مضمر ہے‘‘۔انکا کہنا تھا’’ اسکی مٹی پر فنون اور دریائوں میں کنول ہے، اس وجہ سے ، عظیم کلہن نے 'راج ترنگینی' جموں و کشمیر کا ذکر کرتے ہوئے لکھا گیا’’کیا دنیا میں ایسی کوئی سر زمین ہے جس میں مقدس اور خوبصورت ندیاںبہتی ہیں‘‘۔ایل جی کا کہنا ہے کہ کلہانہ مزید لکھتے ہیں ، "میں نے ایسا شہر نہیں دیکھا جہاں آسمان میں سیاروں کی شان واضح طور پر دکھائی دے۔کلہن نے کہا تھا’’ میں نے ایسا کوئی شہرنہیں دیکھا ہے، جس کے آسمانوں پر سیارے چمکتے ہیں‘‘۔، انہوں نے کہا ، "میں پولیس کے جوانوں اور سیکورٹی فورسز کی بہادری کے سامنے سجدہ ریز رہتا ہوں جو دن رات ہموار زندگی اور پرامن ماحول کو برقرار رکھنے کے لئے سازگار ماحول پیدا کرتے ہیں"۔انہوں نے مزید کہا کہ پورے جموں وکشمیر کی جانب سے ، میں ان تمام فورسز کو خراج عقیدت پیش کرتا ہوں جنہوں نے ہمارے ترنگے کے اعزاز کے لئے ہر چیز کی قربانی دی ہے۔انہوں نے کہاکہ اب کشمیرسمیت پورے مرکزی زیرانتظام علاقہ میں امن وامان کی صورتحال کافی بہترہوچکی ہے ،عام لوگ راحت محسوس کررہے ہیں ،سیول انتظامیہ عوامی مسائل ومشکلات کاازالہ کرنے کیساتھ ساتھ نئی اسکیموں ،پروجیکٹوں اورکاموں کی عمل آوری میں سرعت لارہی ہے ۔ منوج سنہا نے نئے اراضی قوانین سے پیدا شدہ خدشات کے تناظر میں کہاکہ میں لوگوں کی ایک ایک انچ زمین کی حفاظت کی ذمہ داری لیتا ہوں۔ایل جی نے کہا کہ ایک طویل عرصے سے جموں و کشمیر کے شہریوں کو نچلی سطح کی جمہوریت دینے سے انکار کیا گیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا ، "ہم ضلعی ترقیاتی کونسلوں کے لئے آزادانہ ، آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد میں کامیاب رہے ہیں۔ ہم تمام منتخب نمائندوں کو یقین دلاتے ہیں کہ آپ کی حمایت سے انتظامیہ قطار میں کھڑے آخری فرد تک پہنچائے گی"۔ ایل جی نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والے خوفناک سانحہ نے ہماری معاشیات اور معاشرتی زندگی کو کچھ وقت کے لئے بری طرح سے ہلا کر رکھ دیا۔ انہوں نے مزید کہا ، "لیکن اب اندھیرے دور ہوگئے ہیں۔ ایک نئی صبح طلوع ہونے کے ساتھ ہی ، ہم جموں و کشمیر کی معیشت اور سماجی بہبود کے پروگراموں کو آگے لے جارہے ہیں۔"سنہا نے کہا کہ صحت عامہ کے شعبے میں آیوشمان بھارت صحت اسکیم کے ساتھ ایک نیا انقلاب شروع ہوا ہے۔ انہوں نے مزید کہا ، "یہ صحت انشورنس اسکیم ملک اور دنیا میں اپنی نوعیت کی پہلی ہے ، جہاں 1.3 کروڑ کے تحت جموں و کشمیر کے شہریوں کو بلا تفریق فائدہ اٹھایا جائے گا۔"
 

تازہ ترین