تازہ ترین

عوامی حکومت کے بغیر لوگ مشکلات کے بھنور میں: نیشنل کانفرنس

تاریخ    26 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر// نیشنل کانفرنس نے کہا ہے کہ گذشتہ3برسوں سے عوامی حکومت کی غیر موجودگی میں انتظامیہ کی کارکردگی میں ہر گزرتے دن کے ساتھ تنزلی آتی جارہی ہے ، جس کی وجہ سے یہاں کا ہر ایک شعبہ بری طرح متاثر ہوا ہے۔ پارٹی ترجمان عمران نبی ڈار نے کہا کہ انتظامیہ صرف ذرائع ابلاغ میں دیکھنے کو ملتی ہے اور انتظامیہ کی کارروائی صرف کاغذی گھوڑے دوڑانے تک ہی محدود ہے جبکہ زمینی سطح پر عوام کا کوئی پُرسانِ حال نہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعمیر و ترقی کا کہیں نام و نشان نہیں اور لوگوں کو راحت پہنچانا اب محض تصویریں کھنچواکر ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر مشتہر کرنے تک محدود ہوکر رہ گئی ہے جبکہ حقیقی معنوں میں عوام کی راحت رسانی کے گھنے چُنے اقدامات ہی ہورہے ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ انتظامیہ کی بے حسی کی وجہ سے سرینگر جموں شاہراہ اب لوگوں کیلئے باعث عذاب ثابت ہورہی ہے اور شاہراہ پر درماندہ گاڑی میںکپوارہ کے 2 نوجوانوں کی موت نے انتظامی ناکامی اور غفلت شعاری کاخلاصہ کردیا ہے اوراس واقعہ کی تحقیقات ہونی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ نااہلی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے جنوبی کشمیر کے متعدد دیہات ابھی تک برقی رو سے محروم ہیں جبکہ بہت سے علاقے ایسے ہی جہاں بجلی ٹرانسفامر بے کار پڑے ہیں۔ اوڑی کی مثال پیش کرتے ہوئے این سی ترجمان نے کہاکہ اوڑی کے بالائی علاقے پہلی برفباری سے آج تک کٹے ہوئے ہیں کیونکہ انتظامیہ سڑکوں سے برف ہٹانے کی جانب کوئی توجہ نہیں دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کو راشن کی قلت کا سامناہے، بجلی کی بدترین سپلائی جاری ہے، پینے کے پانی کی قلت ہے نیز لوگوں کو بنیادی ضروریات میسر نہیں اور حکومت لوگوں کے ان مصائب کی تماشائی بن کر بیٹھی ہوئی ہے۔
 

تازہ ترین