تعلیمی اداروں کو مرحلہ وار طور پر کھولا جائیگا

اساتذہ کیلئے تربیت کا آغاز

تاریخ    26 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   
(File Photo)

بلال فرقانی
سرینگر//حکومت کی جانب سے ایک سال کے بعد اسکولوں کو دوبارہ کھولنے کے فیصلے کے بیچ ضلعی انتظامیہ سرینگر نے معیاری عملیاتی طریقہ کے بارے میں اساتذہ کو آگاہ کرنا شروع کردیا ہے۔ ضلع سرینگر میں اسکولوں میں سر نو تدریسی عمل شروع کرنے کے بیچ پیر کو بنکٹ ہال سرینگر میں ایک خصوصی بیداری پروگرام منعقد ہوا۔بیداری پروگرام کی صدارت ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری کے ہمراہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرڈاکٹر سید حنیف بلخی نے کی۔گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کمیونٹی سائنس ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے وبائی بیماری کورونا سے متعلق معیاری عملیاتی طریقہ کار اور رہنما خطوط کے بارے میں ایک پریذنٹیشن دی گئی ، جسکا نفاذ اسکولوں میں کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔حکومت نے مرحلہ وار بنیادوں پر  جموں میںیکم اور8 فروری سے اور وادی میںیکم مارچ 2021 سے تعلیمی سرگرمیوں کیلئے اسکولوں کو دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یاد رہے کہ کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجے میں اسکولوں ، کالجوں اور یونیورسٹیوں سمیت تمام تعلیمی اداروں کو گزشتہ سال مارچ سے بند رکھا گیا تھا ۔اس موقعہ پر ڈپٹی کمشنر سرینگر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا’’اسکول کھولنے سے پہلے ہم نے تعلیمی اداروں کیلئے ایک ماہ طویل کورونا وائرس حفاظتی آگاہی پروگرام شروع کیا ہے ، جہاں ایک خصوصی تربیت دی جائے گا۔‘‘ انہوں نے کہا کہ اساتذہ کو ، ضلعی انتظامیہ کے ذریعہ ، حفاظت اور حفظان صحت کے بارے میں تعاون دیا جائے گا،جبکہ اساتذہ کو والدین کے ساتھ اچھا رشتہ قائم رکھنے کیلئے تربیت دی جائے گی۔ ڈاکٹر چودھری نے کہاسرینگر میں قریب1000 اسکول ہیں ، جن میں نجی اور سرکاری دونوں شامل ہیں۔ ان کا کہنا تھا’’ضلعی انتظامیہ اسکولوں کا حفاظتی منصوبہ مرتب کرے گی ، جس کے تحت والدین اور طلباء دونوں کے ساتھ بات چیت کی جائے گی۔اس موقعہ پر گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کمیونٹی سائنس ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ ڈاکٹر سلیم نے کہا’’ہم نے بنیادی حفظان صحت ، جسمانی دوری اور دیگر کورونا بیماری سے متعلق معیاری عملیاتی طریقہ کارکے بارے میں تاثرات بیان کئے جن پر اسکول کھلنے کے دوران عمل کرنے کی ضرورت ہے۔‘‘ میٹنگ میں چیف ایجوکیشن آفیسر ، آر ٹی او کشمیر اور ، تمام زونل ایجوکیشن آفیسر اور نجی اداروں کے سربراہان موجود تھے۔
 

تازہ ترین