بملورہ گاندربل کا پل10 برسوں سے تشنہ تکمیل

درجنوں دیہات کی آبادی کومشکلات ،عوامی حلقوں میں ناراضگی

تاریخ    25 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


ارشاداحمد
 گاندربل//گاندربل میں نالہ سندھ پربملورہ کے مقام پر کروڑوں روپے کی لاگت سے پل کی تعمیر شروع کی گئی تاہم دس برس کا عرصہ گزر جانے کے باوجود بھی پل کی تعمیر مکمل نہیں ہوپارہی ہے،جس کی وجہ سے ضلع کے درجنوں علاقوں کو ضلع اسپتال کے علاوہ دیگر علاقوں تک پہنچنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ سال2011 میں عمر عبداللہ کی قیادت والی سابق حکومت نے بملورہ کے مقام پرنالہ سندھ پر پل کی تعمیر کا کام شروع کیا جوابھی تک مکمل نہیں ہوا۔اس کے علاوہ ضلع میں درجنوں تعمیراتی منصوبوں پر برسوں سے کام جاری ہے  لیکن وہ سب مکمل ہونے کا نام نہیں لے رہے ہیں.۔بملورہ میں رہائش پزید درجنوں کنبوں کو نالہ سندھ کے پار قبرستان موجود ہونے کے سبب کنبے میں ہونی والی موت کی میت کو گاڑیوں یا کشتیوں میں لیجاکر تجہیزوتکفین کرنا پڑتی ہے ۔سال 2009میں نئے ضلع اسپتال کی تعمیر دودرہامہ میں کی گئی جس کو مدنظر رکھتے ہوئے سال2011میں نالہ سندھ پر بملورہ کے مقام پرپل کی تعمیر شروع کی گئی تھی جس کا فائدہ شیرپتھری کے درجنوں دیہات جن میں شالہ بگ،ژھندنہ،ربہ تار،کورگ،سہ پورہ،ہرن، کژھن، پیر پورہ،سالورہ،بملورہ،سمیت دیگر علاقوں کے لوگوں کو ہوتاجو پل کی تعمیر مکمل ہونے پر کم سے کم وقت میں ضلع اسپتال پہنچ پاتے،تاہم محکمہ تعمیرات عامہ دس سال گزرنے کے باوجود بھی اس پل کی تعمیر مکمل کرنے میں ناکام ہوچکا ہے،جس کی وجہ سے درجنوں علاقوں کے ساتھ ساتھ بملورہ کے مقامی لوگوں کو مرنے والے افراد کی تجہیزوتدفین میں مشکلات درپیش ہیں۔اس ضمن میں جب کشمیر عظمی نے تعمیرات عامہ کے ایگزیکٹو انجینئر ظفر قریشی سے رابطہ کیا تو انہوں نے بتایا کہ دس سال قبل پل کی تعمیر شروع کی گئی تھی تاہم کچھ سال تک رقومات کی عدم دستیابی کی بناء  پر تعمیر کا کام رک گیا لیکن اب رقومات واگزار ہوگئی ہیں اور ہماری کوشش ہوگی کہ مارچ اپریل تک پل آمدورفت کے لئے تیار ہوجائے ۔
 

تازہ ترین