۔7روز بعد بیلی برج پر مکمل ٹریفک بحال | 15 روز بعد وادی کی گاڑیاں جموں روانہ، آج بھی وادی سے یکطرفہ ٹریفک چلے گا

تاریخ    18 جنوری 2021 (00 : 12 AM)   


محمد تسکین
 بانہال // کیلا موڑ رام بن کے مقام پر بارڈر روڑ آرگنائزیشن کی طرف سے بیلی برج بنانے کے بعد اتوار کو جموں سرینگر شاہراہ پرمعمول کی آمد و رفت بحال کی گئی۔یہ پل 120فٹ ہے اور بیکن نے اسے محض 60گھنٹوں میں مکمل کیا۔بیکن کے حکام کا کہنا ہے کہ فی الحال شاہراہ پر اسی پل سے ٹریفک کی بحالی ہوگی اور مارچ کے بعد ہی  پرانی سڑک کو قابل استعمال بنایا جاسکتا ہے۔ لوہے کا یہ پل 40 ٹن تک کے وزن کو برداشت کرنے کی صلاحت رکھتا ہے اور اسے فی الحال آئندہ مارچ کے مہینے تک شاہراہ پر ٹریفک کی نقل وحرکت کیلئے استعمال کیا جائے گا جبکہ شاہراہ کا جو حصہ ڈھہ گیا تھا اسکی دیوار کی تعمیر میں مزید ایک ہفتہ درکار ہوگا جبکہ سڑک کی مکمل بحالی میں بھی کچھ وقت درکار ہوگا۔ شاہراہ پر اتوار کے روز وادی سے جموں کی طرف قریب 15روز کے بعد مسافر اور مال بردار گاڑیوں کو جانے کی اجازت دی گئی۔قاضی گنڈ اور کھنہ بل  میںسینکڑوں مال بردار گاڑیاں 15روز سے  درماندہ تھیں جنہیں جموں کی طرف چھوڑ دیا گیا۔ جواہر ٹنل کے آر پار بھاری برفباری اور رام بن بانہال سیکٹر میں بھاری پسیوں اور سڑک نکل جانے کی وجہ سے وادی سے جموں کی طرف جانے والی ہزاروں گاڑیاں قاضی گنڈ، کھنہ بل، اونتی پورہ، بوٹینگو اور شاہراہ کے دیگر مقامات پر درماندہ تھیں۔اتوار کے روز شاہراہ بغیر کسی خلل کے قابل آمدورفت رہی تاہم ناشری ٹنل کے اس پاس ٹول پلازہ پر گاڑیاں وقفے وقفے سے ٹریفک جام میں پھنسی رہیں۔ محکمہ ٹریفک کی جانب سے جاری ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ آج یعنی پیر کو موسم ٹھیک رہنے کی صورت میں شاہراہ پر یکطرفہ ٹریفک کو چلنے کی  اجازت ہوگی اور سرینگر سے جموں کی طرف ٹریفک چلے گا نیز رام بن اور با نہال کے مقامی ٹریفک کو بھی چلنے کی اجازت ہوگی۔ایڈوائزری میں مزید کہا گیا ہے کہ کسی بھی گاڑی کو جموں سے سرینگر کی طرف  چلنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ایڈوائزری مٰن بتایا گیا ک شاہراہ کی حالت مد نظر رکھتے ہوئے  ٹریفک کنٹرول روم سرینگر اور رام بن گاڑیوں کو چھوڑنے سے قبل ایک دوسرے کیساتھ رابطہ بنائے رکھیںگے۔ ایڈوائزری میں یہ بھی بتایا گیا کہ بیلی برج کی وزن اٹھانے  کی صلاحیت 40میٹرک ٹن سے کم ہے۔ گاڑیوں کی ٹائمنگ کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ چھوٹی گاڑیاں زگ قاضی گنڈ سے ایک بجے سے 3بجے تک چھوڑی جائیں گی۔ بڑی گاڑیاں بشمول مال بردار ٹرک زگ قاضی گند سے سہ پہر 4بجے چھوڑے جائیں گے۔ ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ مقررہ وقت کے بعد کسی بھی گاڑی کو نہیں چھوڑا جائیگا۔ایڈوائزری میں سیکورٹی فورسز کو مشورہ دیا گیا کہ وہ ٹریفک ایڈوائزری پلان کے برعکس  شاہراہ کو استعمال نہ کرے۔ان سے کہا گیا ہے کہ وہ  سرینگر سے جموں سفر کرنے سے قبل شاہراہ کی صورتحال کے بارے میں معلومات حاصل کرے۔
 

تازہ ترین