مزید خبرں

تاریخ    18 دسمبر 2020 (00 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک

راجوری۔ تھنہ منڈی سڑک کی بد حالی سے مسافر پریشان |  زائرین اور معززین محکمہ BRO کی عدم توجہی پر نالاں 

طارق شال
تھنہ منڈی // ضلع صدر مقام سے تھنہ منڈی اور بفلیاز کو جانے والی سڑک کی بد حالی کی وجہ سے مسافر پریشان ہیں جبکہ تھنہ منڈی کے معززین اور شاہدرا شریف کے زائرین محکمہ بارڈر روڈس آرگنائزیشن سے سخت نالاںہیں۔ تفصیلات کے مطابق مرکزی سرکار نے ایک ٹھوس قدم اٹھاتے ہوئے اس سڑک کو ڈبل لین تعمیر کرنے کے لئے ٹینڈرز لگائے ہیں۔ سڑک کی تعمیر کا کام دلی کی ایک نجی کمپنی کو کام الاٹ کیا گیا ہے جسکو شروع کرنے میں یہ کمپنی تاخیر کر رہی ہے۔ دوسری طرف بارڈر روڈس آرگنائزیشن نے اس سڑک کی مرمت کے لئے لگ بھگ تین درجن مزدور لگائے ہوئے ہیں۔ 2020 بھی ختم ہونے کی دہلیز پر ہے جبکہ سڑک کی ڈبل لیننگ شروع نہیں ہوئی۔ راجوری۔ تھنہ منڈی اور بفلیاز سڑک کی لمبائی 54 کلو میٹر ہے جو بفلیاز کے مقام پر تاریخی مغل شاہراہ سے جوڑتی ہے۔ تھنہ منڈی سے 6 کلو میٹر کی دوری پر حضرت بابا غلام شاہ ؐ کی زیارت ہے جہاں پر اندرون و بیرون جموں کشمیر سے زائرین حاضری دیتے ہیں لیکن سڑک کی بدحالی کی وجہ سے انہیں کافی مشکلات پیش آتی ہیں۔ جس نجی کمپنی کو سڑک تعمیر کرنے کا کام الاٹ کیا گیا ہے اس کمپنی کے اہلکار گزشتہ تین ماہ سے سروے اور ماپ تول میں مصروف ہیں ۔مقامی لوگوں اور زائرین نے اپنی ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے ضلع انتظامیہ راجوری سے مطالبہ کیا ہے کہ نجی کمپنی کو فوری کام شروع کرنے کی ہدایت جاری کی جائے اور جو لوگ تعمیر میں رکاوٹیں پیدا کررہے ہیں انکے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔ اس سلسلہ میں سب ڈویژنل مجسٹریٹ تھنہ منڈی ڈاکٹر ذاکر حسین نے بتایا کہ ٹنڈرز ہوئے ہیں اور 282 کروڑ کی الاٹ منٹ ہوچکی ہے ۔انہوںنے کہا کہ نجی کمپنی اپنے کام میں لگی ہے،معاوضہ کی فائلیں مرتب کی جارہی ہیںاور جلد کام شروع کیا جائے گا۔
 
 
 

 دیگوارپونچھ اور نوشہرہ سیکٹروںمیں گولہ باری

حسین محتشم+ رمیش کیسر
پونچھ+نوشہرہ//سحری ضلع پونچھ کے دیگوار ملدیالاں سیکٹر میں جمعرات کی صبح ایک بار پھر جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پاکستانی فوجیوں نے بھارت کی اگلی چوکیوں کو نشانہ بناتے ہوئے فائرنگ شروع کردی۔دفاعی ذرائع کے مطابق صبح نو بجے کے قریب پاکستانی فوجیوں نے پونچھ کے دیگوار ملدیالاں سیکٹر میں حدِ متارکہ متصل علاقوںمیں چھوٹے ہتھیاروں سے گولیاں چلانا اور مورٹار کے گولے برسانے شروع کردیئے۔ البتہ چوکس بھارتی جوان جوابی کارروائی کرتے ہوئے اس کا منہ توڑ جواب دیا۔دونوں طرف سے گولی باری کاسلسلہ کچھ دیر تک جاری رہی اور پھر خاموشی چھا گئی۔ اس دوران کسی بھی نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے۔ ادھرپاکستانی فوج نے ضلع راجوری میں نوشہرہ سیکٹر کے علاقے لام جھانگڑ میں لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزی کی ہے۔عہدیداروں نے بتایا کہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب میں پاک فوج نے ایل او سی کے علاقے جھانگڑ میں بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی جس کے بعد لام کے علاقے پر فائرنگ اور گولہ باری ہوئی۔حکام نے مزید کہا"ان دونوں علاقوں میں پاک فوج نے چھوٹے ہتھیاروں سے فائرنگ کی اور مارٹر گولہ باری کا بھی سہارا لیا" ۔ان کا کہنا تھا کہ فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ صبح سویرے تک وقفے وقفے سے جاری رہا ، تاحال کسی نقصان کے کوئی اطلاع موصول نہیں ہوا ہے۔
 
 
 

دو مراکز پر دوبارہ پولنگ کے مطالبہ کو لیکر دوسرے روز بھی احتجاج | ڈی سی کی جانب سے معاملہ الیکشن کمشنر کے ساتھ اٹھانے کی یقین دہانی پر دھرنا ختم

جاوید اقبال 
مینڈھر//ڈی ڈی سی انتخابات کو لیکر مینڈھر میں گذشتہ رو ز الیکشن لڑنے والے امیدواروں نے کئی پولنگ بوتھوں پر دوبارہ پولنگ کولیکر دیرجمعرات کی صبح کو پھر یادگار چوک مینڈھر میں الیکشن لڑنے والے امیدوار اور اور ان کے حامی جمع ہوگئے اور انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی شروع کردی جس کو دیکھتے ہوئے تحصیلدار مینڈھر اور ایس ڈی پی او مینڈھر نے موقعہ پر پہنچ کر احتجاج کرنے والے امیدواروں سے کہا کہ ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ راہل یادو تحصیل کمپلکس مینڈھر میں پہنچ چکے ہیں لہٰذ ا آپ لوگ احتجاج کو ختم کرو اور اپنا ایک وفد لیکر ڈی ڈی سی سے بات چیت کرو جس کے بعد الیکشن لڑنے والے امیدوار اور انکے کچھ حامی تحصیل کمپلکس میں پہنچ کر انہوں نے دوبارہ سخی میدان پنچائت کے دو پولنگ بوتھوں پر دوبارہ سے ووٹ ڈالنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور آپ دوبارہ پولنگ کروائیں کیوں کہ وہاں پر دھاندلی ہوئی ہے جس کے بعد ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ راہل یادو نے صاف صاف کہا کہ آپ لوگ اور آپ کے ایجنٹ مجھے ایک ریزو لیشن دیں تاکہ دوبارہ پولنگ کیلئے میں الیکشن کمیشن کو خط لکھ سکو تاکہ آپ کی پولنگ دوبارہ کروائی جائے جس کے بعد الیکشن لڑنے والے امیدواروں نے ایک ریزولیشن ڈالکر ڈی سی پونچھ کے حوالے کیا جس کے بعد امیدوار دوبارہ یادگار چوک مینڈھر پہنچے اور احتجاج کرنے والے لوگوں کو ساری کہانی سنائی جس کے بعد احتجاج ختم ہوا ۔الیکشن لڑنے والے امیدواروں کا یہ کہنا تھا کہ اگر پولنگ دوبارہ نہیں کروائی گئی تو ہم دوبارہ احتجاج کریں گے جسکے لئے آپ لو گوں کو تیار رہنا ہوگا ۔
 
 
 

چینی موبائل ایپلی کیشنز کا استعمال نہ کریں |  جموں پاور ڈسٹری بیوشن کارپوریشن لمیٹڈ کا حکمنامہ

جموں// جموں پاور ڈسٹری بیوشن کارپوریشن لمیٹڈ (جے پی ڈی سی ایل) نے محکمے کے تمام افسروں اور ملازمین کو چینی موبائل ایپلی کیشنز استعمال کرنے سے باز رہنے کی ہدایات جاری کی ہیں۔چیف انجینئر جے پی ڈی سی ایل جموں انجینئر گرمیت سنگھ کی طرف سے جاری ایک حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ تمام ماتحت افسران و ملازمین کو ہدایات دی جا رہی ہیں کہ وہ چینی موبائل ایپلی کیشنز کا استعمال نہ کریں۔حکمنامے میں کہا گیا’’حکومت ہند کی طرف سے پابندی عائد ہونے کے پیش نظر تما م ماتحت افسروں کو سخت ہدایات دی جا رہی ہیں کہ وہ چینی موبائل ایپلی کیشنز خاص کر ‘کیم سکینر ایپلی کیشن’ کو کسی بھی دفتری کام کے لئے استعمال نہ کریں‘‘۔حکمنامے میں کہا گیا کہ افسران چینی ایپلی کیشنز کے بجائے متبادل ایپلی کیشنز کا استعمال کر سکتے ہیں اور ‘کیم اسکینر ایپلی کیشن’ استعمال کرنے والے افسر یا ملازم پر تحت قانون کارروائی کی جائے گی۔دریں اثنا گرمیت سنگھ نے بتایا کہ یہ حکمنامہ حکومت ہند کی طرف سے چینی موبائل ایپلی کیشنز پر عائد پابندی کے پیش نظر جاری کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ محکمے میں کام کرنے والے عملے کو اس حکمنامے پر من وعن عمل کرنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ حکمنامے کی خلاف ورزی کرنے والے کے خلاف تحت قانون کارروائی کی جائے گی۔ 
 
 
 

گرسائی مینڈھر میں پتھرائو کے بعد حالات کشیدہ

جاوید اقبال 
مینڈھر//ضلع ترقیاتی انتخابات کو لیکر جمعرات کے روز اس وقت گرسائی علاقہ میں حالات خراب ہوگئے جب باجی محمد فاروق کی گاڑی ہرنی علاقہ سے گزررہی تھی کہ اس پر کچھ لوگوں نے پتھرائو کر دیا جس کے نتیجہ میں گاڑی کے شیشے ٹوٹننے کے ساتھ ساتھ تین لوگ بھی معمولی زخمی ہوگئے۔ زخمی لوگوں کی خبر سنتے ہی باجی محمد فاروق جوکہ آزاد امیدوار کے طور پر ہرنی علاقہ سے الیکشن لڑرہے تھے،کے حامی بڑی تعداد میں گرسائی علاقہ میں جمع ہوگئے اور گاڑیوں کی آمد ورفت کو بندکرکے پولیس اور اتنظامیہ کے خلاف نعرے بازی شروع کردی جبکہ احتجاج کرنے والے لوگوں نے ایس ایچ او ہرنی پر حملہ بول دیا جسکے نتیجہ میں دوپولیس اہلکار بھی معمولی زخمی ہوئے۔کشیدہ حالات کو دیکھتے ہوئے ایس ڈی پی او مینڈھر سید ظہیر عباس جعفری پولیس نفری کے ہمراہ موقعہ پر پہنچ گئے۔ البتہ آخری خبریں ملنے تک احتجاج جاری تھا اور لوگ لگاتار نعرے بازی کررہے تھے ۔
 
 
 

 الیکشن عمل کے احسن انعقاد پر اظہار تشکر

مینڈھر//جاوید اقبال //مینڈھر بی حلقہ انتخاب سے آزاد امیدوار انجینئر واجد علی ٹیکو کا ایک وفد جمعرات کے روز تحصیل کمپلیکس مینڈھر پہنچا جن کے ہمراہ بڑی تعداد میں لوگ شامل تھے۔ انہوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ راہل یادو سے ملکر ایک یاداشت پیش کی۔ انکا کہنا تھا کہ انتخابات کو لیکر انتظامیہ نے بہت بہتر کا کیا ہے جس کیلئے آپ مبارکباد کے مستحق ہیں انکا کہنا تھا کہ مینڈھر بی انتخابی حلقہ میں پر امن انتخابات ہوئے ہیں لیکن افسوس کی بات ہے کہ کچھ لوگ انتخابات کو لیکر احتجاج کررہے ہیں اور پر امن ماحول کو خراب کرنا چاہتے ہیں لہٰذا انتظامیہ ماحول کو خراب نہ ہونے دے اور اپنا کام صیح طریقہ سے کرے ۔
 
 
 

راجوری میں نوعمر لڑکے کی پراسرار موت

راجوری//راجوری قصبے کے جواہر نگر علاقے کا رہنے والا ایک سترہ سالہ نوعمر لڑکا پراسرار حالت میں فوت ہوگیا۔مرنے والے کی شناخت انوج شرما ولد انیل شرما ساکن جوہری نگر علاقہ راجوری قصبے کے نام سے ہوئی ہے۔پولیس نے بتایا کہ جمعرات کی صبح مقتول کو اپنے کمرے کے اندر چھت کے پنکھے سے لٹکا ہوا پایا گیا تھا جس کے بعد پولیس ٹیم موقع پر پہنچی اور پوسٹ مارٹم معائنے کے لئے نعش کو نکال لیا۔پولیس نے مزید کہا"اس معاملے کی تحقیقات شروع کرنے کے بعد پولیس کے ساتھ دوائی قانونی قانونی کارروائیوں کے بعد لاش کو آخری رسومات کے لئے اہل خانہ کے حوالے کردیا گیا۔" 
 
 
 

 ووٹر فہرستوں سے نام غائب ہونے کاالزام | رام بن میں بہت سے لوگ ووٹ دینے سے ر ہ گئے 

ایم ایم پرویز
رام بن //ضلع رام بن میں ڈی ڈی سی کی 14 نشستوں کے لئے انتخابات ہونے کے بعد کچھ ووٹروں نے شکایت کی کہ ان کے نام متعلقہ بلاک ڈیولپمنٹ افسران کی طرف سے تیار کردہ ووٹر لسٹوں سے خارج کردیئے گئے ہیں۔متعدد علاقوں کے رہائشیوں کا الزام ہے کہ سینکڑوں ووٹروں کو بلا وجہ اور بلا جواز متعلقہ بلاک سطح کے افسران (بی ایل او) اور انتخابی رجسٹریشن کے افسران کی فہرستوں سے جان بوجھ کر یانادانستہ طور حذف کردیا گیا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ کسی ووٹر کا نام رائے دہندگی کی فہرست سے ہی ختم ہوسکتا ہے اگر وہ رہائش کسی دوسری جگہ منتقل ہو گیا ہو۔انہوں نے کہا کہ سیر ی پنچائت گول اوکھڑال کھری اور گاندھری اور کچھ دوسرے دیہاتوں میں ووٹر فہرستوں میں زیادہ تر نام حذف کردیئے گئے ہیں۔الیکشن کمیشن نے رائے دہندگان کے ناموں کو حذف کرنا خود بند کردیا ہے اور ایسا تب ہی کیاجاتا ہے جب کوئی خود اپنا نام حذف کرنے کی درخواست دے۔ مقابلہ کرنے والے امیدواروں نے کہا کہ سینکڑوں وورز اپنے بالغ حق رائے دہی پر عمل کرنے سے محروم ہوگئے  کیونکہ ان کے نام ووٹر لسٹوں سے جان بوجھ کر یا نادانستہ طور حذف کردیئے گئے تھے۔لوگوں کا مطالبہ ہے کہ ان خامیوں کے لئے الیکشن کمیشن کو ذمہ داری طے کرنا ہوگی۔
 
 
  

مشیر بصیر خان نے صنعت و حرفت کی کارپوریشنوں کا جائزہ لیا 

جموں//لفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے محکمہ صنعت و حرفت کی کارپوریشنوں کے کام کاج کا جائیزہ لینے کیلئے منعقدہ میٹنگ کی صدارت کی ۔ میٹنگ میں منیجنگ ڈائریکٹر جے کے منرل لمٹیڈ اور منیجنگ ڈائریکٹر جے کے سیمنٹ لمٹیڈ موجود تھے ۔ جے کے منرلز لمٹیڈ کے کام کاج کا جائیزہ لینے کے دوران مشیر نے کالا کوٹ اور کوٹلا کی کوئلے کی کانوں ، آثار اور پارلنکا کی جپسم کانوں اور چونے کے پتھر کی کانوں وغیرہ کی موجودہ صورتحال کے بارے میں تفصیل طلب کی۔ انہوں نے ان قدرتی وسائل کو بہتر طور بروئے کار لانے میں درپیش رکاوٹوں کا بھی جائیزہ لیا ۔ مشیر خان نے متعلقہ حکام کو کالا کوٹ کی کوئلے کی کانوں کا مفصل مطالعہ کرنے کیلئے کہا تا کہ یہ کانیں زیادہ طور سود مند ثابت ہو سکیں ۔ مشیر نے ان پروجیکٹوں کو تجارتی خطوط پر چلانے کی ضرورت پر زور دیا اور محکمہ کو اپنے عملے اور مشنری کو معاشی طور کار آمد پروجیکٹوں کیلئے ہی استعمال کرنے کیلئے کہا ۔ منیجنگ ڈائریکٹر جے کے منرلز نے مشیر کو کارپوریشن کی مالی صورتحال کے بارے میں تفصیل دی ۔ انہوں نے کہا کہ کارپوریشن کالا کوٹ اور کوٹلہ میں واقع تین کوئلے کی کانوں سے کوئلہ نکال رہی رہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ماہانہ ایک ہزار میٹرک ٹن کوئلہ ان کانوں سے نکالا جا رہا ہے۔ آثار ، ڈوڈہ اور پارلنکا رام بن کی جپسم کانوں کے بارے میں تفصیل دیتے ہوئے منیجنگ ڈائریکٹر نے کہا کہ کارپوریشن فی ماہ 30 ہزار میٹرک ٹن جپسم کی کانکنی کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کارپوریشن پارلنکا جپسم کانوں سے زیادہ سے زیادہ کانکنی پر توجہ مرکوز کر رہی ہے ۔ منیجنگ ڈائریکٹر جے کے منرلز نے مشیر کو کارپوریشن میں باقاعدگی لانے سے متعلق معاملات بھی پیش کئے ۔ جے کے سیمنٹس لمٹیڈ کی کارکردگی کا جائیزہ لینے کے دوران مشیر نے منیجنگ ڈائریکٹر کو گذشتہ چار پانچ سال سے کارپوریشن کو درپیش مسائل کا مفصل تجزیہ کرنے کیلئے کہا تا کہ مستقبل کیلئے ایک لایحہ عمل مرتب کیا جا سکے ۔ 
 
 
 

جے ڈی اے بورڈ آف ڈائریکٹرس کی84ویں میٹنگ | مختلف سرکاری محکموں کو اراضی کی الاٹمنٹ منظور

جموں//پرنسپل سیکرٹری مکانات و شہرتی ترقی دھیر ج گپتا نے  یہاں سول سیکرٹریٹ میں جموں ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے بورڈ آف ڈائریکٹر س کی 84ویں میٹنگ کی صدارت کی۔دورانِ میٹنگ 83 ویں بورڈ آف ڈائریکٹرس کی میٹنگ کے فیصلہ جات کی تصدیق کی گئی اور 84ویں بورڈ آف ڈائریکٹرس کی میٹنگ کے ایجنڈاپر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔بورڈنے جے ڈی اے کی زمین سماجی ، مذہبی ، خیراتی مقاصد کے لئے ٹرسٹوں ، نجی اداروں ، رضاکار تنظیموں کو الاٹ کرنے کی پالیسی کو اصولاً منظور کیا اورہاوسنگ کالونیوں میں اِلتوأ میں پڑے پلاٹوں سے متعلق معاملات کو نمٹانے کے لئے یکسان پالیسی مرتب کرنے کو بھی منظور ی دی گئی۔بورڈ آف ڈائریکٹرس نے مختلف سرکاری محکموں جیسے جے ایم سی ،بجلی ، یوای ای ڈی، امور نوجوان و کھیل کود کو اراضی کی الاٹمنٹ سے متعلق تجویز پر بھی مفصل بحث و تمحیص کی جو بعد میں بورڈ نے منظور کیا۔بورڈ نے مالی سال 2020-21 کے لئے ترمیم شدہ بجٹ اور 2021-22 کے لئے بجٹ تخمینے کو منظوری دی ساتھ ہی جی ڈی اے کے چار ملازمین کو گزیٹیڈ کیڈر ترقی کو بھی منظوری دی گئی۔ اس کے لئے جی ڈی اے کے بھرتی قواعد کی عدم موجودگی کے سبب دیگر محکموں کے قواعد کو لاگو کیا گیا۔پرنسپل سیکرٹری مال شالین کابرا نے جی ڈی اے کی بازیافت ، حد بندی اور فصیل بندی کی گئی اراضی سے متعلق تازہ ترین اعداد و شمار پیش کرنے کے لئے کہااور بورڈ آف ڈائریکٹرس میٹنگوں میں باقاعدہ ایجنڈے کے طور جی آئی ایس میپنگ سمیت پیش کرنے کی ہدایت دی۔
 

تازہ ترین