عمارتوں کی تعمیر کے منصوبوں سے متعلق بدعنوانی کے الزامات| ہاؤسنگ بورڈ سرینگر کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج

تاریخ    17 دسمبر 2020 (00 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//عمارتوں کی تعمیر کے منصوبوں سے متعلق بدعنوانی کے الزامات میں انسداد رشوت ستانی بیورو( اے سی بی )نے جموں کشمیر ہاؤسنگ بورڈ سرینگر کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کیاہے۔انسداد بدعنوانی بیورو نے بھاری شرحوں پر تعمیراتی مواد کی خریداری اور غیر تعمیراتی منصوبوں میں غیر معیاری میٹریل کے استعمال کے علاوہ سال2015سے سال2017تک ٹینڈر عمل کے بغیر تعمیراتی عمل میں پیش رفت کے الزامات کی پاداش میں جے اینڈ کے ہاؤسنگ بورڈ سرینگرکے افسران اہلکاروں کے خلاف مقدمہ زیر ایف آئی آر 27/2020 درج کیاہے۔ ائے سی بی کا کہنا ہے کہ تحقیقات کے دوران یہ پتہ چلا ہے کہ یہ کام دوہرے نظام کے تحت انجام دیئے جانے تھے،جن میںمزدور اور میٹریل علیحدہ علیحدہ تھا،جس میں میٹریل کو ٹینڈر نظام کے تحت اصل پیدوار کرنے والوں سے حاصل کرنا تھا۔ان کا کہنا تھا کافی میٹریل کو مزدوروں کے ساتھ سازش کرکے ٹینڈر کے عمل سے حاصل کیا گیا اور غیر معمولی نرخوں پر حاصل کیا گیا۔ ائے سی بی نے مزید کہا کہ تحقیقات کے دوران یہ بات منظر عام پر آئی ہے کہ سری نگر میں ایک منصوبے میں ، کھدائی کی گئی زمین کو 11756 مکعب میٹر تک کسی ڈمپنگ سائٹ میں منتقل کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے لیکن ڈمپنگ سائٹ کو کسی سائٹ لان  میں نشاندہی نہیں کی گئی۔ ڈمپنگ کا مقام پروجیکٹ سائٹ سے طویل فاصلے پر واقع ہے لیکن اس کوکم سے کم فاصلے پر واقع دکھایا گیا ہے ۔اینٹی کورپشن بیورو کا مزید کہنا ہے کہ اس کے علاوہ کھدائی کرنے والے مقام سے لے کر ڈمپنگ سائٹ تک میٹریل  پہنچانے کیلئے گاڑیوں کا کرایہ بھی زیادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ نامعلوم ڈمپنگ سائٹ کی عدم موجودگی کی بنا پر لاگت کا بل ادا کیا گیا ہے،جسکے نتیجے میں سرکاری ملازمین کو غیر مناسب فائدہ پہنچنے کے ساتھ ساتھ سرکاری خزانے کو نقصان ہوا۔ائے سی بی کا کہنا ہے کہ عمل درآمد کرنے والی ایجنسی کھدائی سے قبل قدرتی سطح کی نقش نگاری کرنے والے کسی بھی  نقشہ یا کراس سیکشن کو فراہم کرنے میں ناکام رہی ہے جو زمین کے 11756 مکعب میٹر کی کھدائی کے انکے دعوے کی تائید کرے۔انہوں نے کہا کہ زمین کی کھدائی کی وجہ سے کسی ایک سائٹ پر ہونے والا تخمینی نقصان تقریبا 15 لاکھ اور اس معاملے کی تفتیش مزید آگے بڑھنے پر اس نقصان میں اضافے کا خدشہ ہے۔انہوں نے بتایا الاٹ شدہ  کاموں میں اقربا پروری کے الزامات بھی دیگر منصوبوں کے سلسلے میں مختلف مقامات پر لگائے گئے ہیں جن کی تحقیقات کے دوران جانچ کی جائے گی۔  بیان میں کہا گیا کہ اس وقت کے ڈپٹی جنرل منیجر جے اینڈ کے ہاؤسنگ بورڈ یونٹ سیکنڈ سرینگر اس وقت کے اسسٹنٹ منیجر جے اینڈ کے ہاؤسنگ بورڈ یونٹ سیکنڈ سرینگر اور دیگر افراد کی جانب سے دفعہ5  شق(1) کے تحت جرائم پیش کئے گئے اور اس سلسلے میں ان کے خلاف پولیس تھانہ انٹی کورپشن بیورو سرینگر میں مقدمہ درج کیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ اس حوالے سے مجاز عدالت سے تلاشی وارنٹ حاصل کیے گئے اور مختلف مقامات پر تلاشی لی گئی،جبکہ تلاشی کے دوران موقع پر کچھ مجرمانہ موادا وردستاویزات ضبط کئے گئے۔اس معاملے میں مزید تفتیش جاری ہے۔
 

تازہ ترین