تازہ ترین

کورونا وائرس| ساڑھے 29ہزار ٹیسٹ،4اموات،512کا اضافہ

متوفین کی مجموعی تعداد1680، روزانہ متاثر ہونے والے افراد کی تعداد جموں میں زیادہ

تاریخ    29 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
 سرینگر //جموں و کشمیر میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 29 ہزار 370 تشخیصی ٹیسٹ کئے گئے جن میں 512افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطر متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 9 ہزار383ہوگئی ہے ۔ ان میں 65ہزار435کشمیر جبکہ 43 ہزار948ہوگئی ہے۔ بدھ کو مزید 4افراد کورونا وائرس سے فوت ہوگئے۔ متوفین کی مجموعی تعداد1680ہوگئی جن میں581جموں جبکہ 1099کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ نئے 512معاملات میں  212کشمیر جبکہ جموں صوبے میں 300افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ کشمیر صوبے کے212متاثرین میں 97سرینگر، 26بارہمولہ، 25بڈگام، 14پلوامہ، 16کپوارہ، 7اننت ناگ، 12بانڈی پورہ، 14گاندربل، 0کولگام اور ایک شوپیان سے تعلق رکھتا ہے۔ جموں صوبے کے300متاثرین میں 129جموں، 33راجوری، 31ادھمپور، 18ڈودہ،23کٹھوعہ، 1پونچھ، 20سانبہ، 26کشتواڑ، 9رام بن اور 10ریاسی سے تعلق رکھتے ہیں۔ 

 مزید4اموات

 پچھلے24گھنٹوں کے دوران جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے مزید 4افراد فوت ہوگئے۔ مرنے والوں میں 2کشمیر جبکہ 2جموں صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ کشمیر میں فوت ہونے والے 2متاثرین میں ایک بارہمولہ اور ایک گاندربل سے تعلق رکھتا ہے۔ بارہمولہ میں تعینات محکمہ صحت کے ایک سینئر ڈاکٹر نے بتایا ’’ ہرد اچلو سے تعلق رکھنے والے ایک 48سالہ شخص کورونا وائرس سے پیدا ہونے والے نمونیا سے فوت ہوگیا ہے‘‘۔سینئر ڈاکٹر نے بتایا کہ مذکورہ جی ایم سی بارہمولہ میں فوت ہوگیا ۔گاندربل ضلع میں تعینات محکمہ صحت کے ایک سینئر ڈاکٹر نے بتایا کہ دارند سے تعلق رکھنے والا ایک 60سالہ معمر شخص کورونا وائرس سے پیدا ہونے والے نمونیا سے فوت ہوگیا ہے۔ سینئر ڈاکٹر نے بتایا کہ مذکورہ شخص صدر اسپتال سرینگر میں فوت ہوگیا ۔ جموں صوبے میں کورونا وائرس سے 2افراد فوت ہوگئے۔ مرنے والوں میں ایک جموں اور ایک ڈودہ سے تعلق رکھتا ہے۔ 

حکومتی بیان

سرکاری بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے1,09,383معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے5,112سرگرم معاملات ہیں ۔ اَب تک1,02,591اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں ۔جموں وکشمیر میں کوروناوائرس سے مرنے والوں کی مجموعی تعداد1,680تک پہنچ گئی ،جن میں سے 1,099کا تعلق کشمیر صوبہ سے اور581کاتعلق جموں صوبہ سے ہیں۔اِس دوران سنیچر کو مزید632افرادشفایاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے179اَفراداور کشمیر صوبے کے 453اَفرادشامل ہیں۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اَب تک 29,69,672ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  28؍نومبر 2020 کی شام تک 28,60,289نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اَب تک7,85,192افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ اِن میں20,950اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔5,112  اَفراد کوآئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ39,938اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اِسی طرح بلیٹن کے مطاب7,17,512اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔
 

لیہہ میں رات کا کرفیو نافذ

کورونا سے مزید ایک فوت   متاثرین میں 44کا اضافہ 

لیہہ//لیہہ انتظامیہ نے صوبے میں سنیچر سے رات کا کرفیو نافذ کردیا ہے جبکہ صوبے میں کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے چار افراد کے جمع ہونے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ لداخ صوبے میں سنیچر کو کورونا وائرس سے مزید اور ایک شخص فوت ہوا ہے  اوراس طرح فوت ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد 114ہوگئی ہے۔ سنیچر کو لداخ میںمزید 44افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اس طرح متاثرین کی مجموعی تعداد8272 ہوگئی ہے۔ لیہہ میں سول سوسائٹی کی جانب سے ازخود لاگو کیاگیا لاک ڈائون سنیچر کو چھٹے دن میں داخل ہوگیا ۔ سنیچر کو لیہہ میں کورونا وائرس سے مزید ایک شخص فوت ہوگیا اور اسطرح ضلع میں کورونا وائرس سے فوت ہونے والے افراد کی تعداد73ہوگئی ہے۔ جبکہ کرگل میں ابتک کورونا وائرس سے 41افراد فوت ہوگئے۔ تازہ 44معاملات میں سے 42لیہہ جبکہ 2کرگل سے تعلق رکھتے ہیں۔ سرکاری خبر نامہ میں بتایا گیا ہے کہ سنیچر کو مزید 100مریض صحتیاب ہونے کے بعد گھر روانہ ہوگئے جن میں 89لیہہ جبکہ 11کرگل سے تعلق رکھتے ہیں۔ ادھر ضلع مجسٹریٹ لیہہ سچن کمار ویشیا نے رات کو کرفیو لاگو کرنے کا اعلان کیا ہے اور ضلع میں 4افراد کے جمع ہونے پر پابندی عائد کردی ہے۔

تازہ ترین