تازہ ترین

سانبہ میں407افراد3161 کنال اراضی پر قابض

کونسل کے سابق چیئرمین اور سابق ایم ایل اے بھی مستفیدین میں شامل

تاریخ    29 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


سید امجد شاہ

جموں میں 48کنال سرکاری اراضی سابق ایم ایل سی اور تاجر و دیگران کے زیر تصرف 

 
جموں// سابق ممبر اسمبلی کے بیٹے ،سابق چیئرمین قانون ساز کونسل کے دو فرزندان ،معروف کاروباری افراد سمیت 407 ایسے لوگ شامل ہیں جنہوںنے سانبہ ضلع میں روشنی ایکٹ کے تحت 3161 کنال اور 6.5 مرلہ اراضی پر قبضہ کررکھاہے ۔وہیں ضلع جموں کے سنجواں علاقے میں سابق ایم ایل سی اور پی ڈی پی کے رہنما نے سرکاری اراضی پر قبضہ کیاہوا ہے۔ڈپٹی کمشنر سانبہ کے اعدادوشمارکے مطابق روشنی ایکٹ کے تحت 407 کے قریب افراد نے فائدہ اٹھایاجن میں سیاستدان، کاروباری شخصیات، سابق ممبران قانون ساز، ریٹائرڈ آرمی اہلکار، کسان اور دیگر شامل ہیں۔ان لوگوں کو سانبہ ضلع کے سانبہ ، وجے پور، گگوال، رام گڑھ، راج پورہ اور بڑی براہمناں کی6 تحصیلوں میں 3161 کنال اور 6.5 مرلہ پر فائدہ دیا گیا ہے۔روشنی سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں میں نمایاں نام کانگریس کے سینئر رہنما اور سابق چیئرمین قانون ساز کونسل کے دو بیٹے ہیں جن کے پاس 34 کنال اور 11 مرلہ اراضی ہے۔ سنجیو شرما جو سابق ممبر اسمبلی پرکاش چندر شرما کے بیٹے اور کانگریس پارٹی کے رہنما ہیں، نے بھی نندنی میں 3 کنال اراضی پر روشنی کے تحت فائدہ اٹھایا ہے۔سرکاری تفصیلات کے مطابق ساحل مہاجن ولد سنیہ گپتا جو نامور کاروباری شخص ہیں،نے بیر پور میں 20 کنال اراضی پر روشنی کے تحت فائدہ اٹھایا۔ ساحل نے یہ زمین سہودیو سنگھ ولد کنول سنگھ نامی کسان سے خریدی تھی۔دریں اثنا، دیگرتاجر سدھیر کھورانا ولد نند لال، ہیرا لال ولد جگن ناتھ ساکن جموںنے ضلع سانبہ کے سلمیری میں 25 کنال اراضی پر روشنی کے تحت فائدہ اٹھایا ہے۔
 

جموں میں روشنی کے معاملات

ایک تازہ فہرست میںڈویژنل کمشنر جموں کے دفتر نے ایک لسٹ جاری کی ہے جس میں 48 کنال سرکاری اراضی غیر قانونی قبضہ میں دکھائی گئی ہے۔سرکاری تفصیلات کے مطابق سابق ایم ایل سی اور پی ڈی پی رہنما نظام الدین کھٹانہ نے سنجواں میں 8 کنال اراضی پر قبضہ کیا ہے۔اس کے علاوہ تاجر سجاد چودھری نے جموں میں 20 کنال پر قبضہ کیا ہے۔ سرکاری ملازم نے پنجگرائیںمیں 17 کنال اور 9 مرلہ اراضی پر تجاوزات کیں اور ایس ایل گلہتی کے ذریعہ نیشنل گیراج 3 کنال اور 9 مرلہ سرکاری اراضی پر قائم کیا گیا ہے۔