۔ 3دسمبر تک مجموعی طور پر خشک رہنے کی توقع:محکمہ موسمیات

بالائی علاقوں میں تازہ برف باری،متعددعلاقوں کی اہم اوررابطہ سڑکیں ہنوز بند

تاریخ    26 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


اشفاق سعید
سرینگر //محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آج صبح سے موسم میں بہتری آئے گی ۔بدھ کو تیسرے روز بھی وادی کے بالائی اور میدانی علاقوں میں برف باری اور بارشوں کا سلسلہ جاری رہا، جس کے نتیجے میں ابھی بھی متعدد علاقوں کی اہم اور رابطہ سڑکیں گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند پڑی ہیں ۔وادی کشمیر میں گذشتہ3 دنوں سے وقفے وقفے سے ہونے والی برف  باری کا سلسلہ بدھ کو مسلسل تیسرے روز بھی دن بھر جاری رہا ۔ سیاحتی مقامات گلمرگ ،پہلگام اور سونہ مرگ میں تازہ برفباری ہوئی جبکہ کپوارہ کے بالائی علاقوں میں بھی تازہ برف باری کی اطلاعات ہیں ۔معلوم ہوا ہے کہ ان مقامات پر 4سے6انچ تازہ برفباری ہوئی جبکہ میدانی علاقوں بشمول دارالحکومت سرینگر میں مسلسل تیسرے روز بھی بارشوں کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری رہا ۔کنگن سے نمائندے غلام نبی رینہ کے مطابق کلن، گنڈ، اور سونہ مرگ شاہراہ پر پھسلن پیدا ہونے کے نتیجے میں چھوٹی گاڑیوں کو دقتوں کا سامنا کرنا پڑا۔ اس دوران 434کلو میٹر سرینگر لداخ شاہراہ پر تیسرے روز بھی ٹریفک کی نقل و حمل بند رہی، جس کے نتیجے میں شاہراہ کے دونوں طرف سینکڑوں گاڑیاں درماندہ ہیں ۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ بدھ کے روز کسی بھی گاڑیوں کو شاہراہ پر چلنے کی اجازت نہیں دی گئی۔ ڈی ایس ڈی ٹریفک رورل گاندربل فہیم علی نے بتایا کہ تازہ برفباری سے سرینگر لداخ شاہراہ کے بیشتر مقامات پر پھسلن پیدا ہوئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ لداخ کی طرف جانے والے ڈرائیوروں سے کہا گیا ہے کہ وہ چین لگا کر شاہراہ پر چلیں اور جس گاڑی کو چین لگی نہیں ہوگی ،اسے چلنے کی اجازت نہیں ہوگی۔سرحدی ضلع شوپیاں کے بالائی علاقوں میں بھی بارشوں کے ساتھ برف باری کا سلسلہ جاری تھا جس کے سبب مغل روڑ بھی مسلسل تیسرے روز  گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند رہی ۔کپوارہ سے اشرف چرغ کے مطابق برف باری کا سلسلہ پہاڑی علاقوں میں تیسرے روز بھی جاری رہا جبکہ کرناہ کپوارہ ، مژھل کپوارہ اور کیرن کپوارہ سڑکیں ابھی بھی گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند ہیں جس کے سبب ان علاقوں کے سینکڑوں لوگ کپوارہ میں درماندہ ہیں ۔ان سڑکوں پر 2سے تین فٹ تازہ برف جمع ہو گئی ہے جبکہ ضلع بانڈی پورہ کے قصبہ گریز اور اس کے ملحقہ علاقہ جات کا وادی کے دوسرے حصوں کے ساتھ 14 نومبر سے رابطہ منقطع ہے۔محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے بتایا کہ وادی میں آج صبح سے موسم میں بہتری آئے گی۔انہوں نے کہا کہ اب موسم 3دسمبر تک مجموعی طور پر خشک رہنے کی توقع ہے ۔محکمہ کے مطابق سرینگر شہر میں گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران 4.9ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ قاضی گنڈ میں 13.8ملی میٹر سیاحتی مقام پہلگام میں 11.1ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے ۔سرحدی ضلع کپوارہ میں 16.8ملی میٹر بارش ہوئی ہے ۔کوکرناگ میں 4.3ملی میٹر، سیاحتی مقام گلمرگ میں 33.7ملی میٹر برف اور بارشیں ہوئی ہیں ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ وادی کا سرد ترین علاقہ رہا جہاں گذشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت منفی5.0 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ دوسرے مشہور سیاحتی مقام پہلگام میں کم سے کم درجہ حرارت 0.3 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیاگیا۔گرمائی دارلحکومت سرینگر میں کم سے کم درجہ حرارت 0.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ۔
 

تازہ ترین