تازہ ترین

! سبزیاں صحت کی دوست،جم کر کھائیں

سائنس

تاریخ    23 نومبر 2020 (00 : 12 AM)   


بشیر اطہر
کہتے ہیں کہ جان ہے تو جہان ہے۔ اسی لئے انسان دنیا میں زندہ رہنے کیلئے مختلف قسم کی غذؤں کا استعمال کرتا ہے اور مختلف قسم کی ورزشیں بھی کرتا ہے کیونکہ ایسا کرنے سے انسان تندرست رہتا ہے اور تندرست انسان کے جسم میں دماغ بھی تندرست ہوتا ہے۔ اسی لئے انسان کو ایسی غذاؤں کا استعمال کرنا چاہئے جن سے اس کے صحت پر برے اثرات نہ پڑ سکیں ۔انہی غذائوں کو سائنس نے متوازن غذا کہا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے یہ دنیا خوبصورت بنائی ہے اور اسی دنیا میں اپنے بندوں کی خاطر ایسی چیزیں مہیا کی ہیں جن کے استعمال کرنے سے انسان کی صحت اچھی رہ سکتی ہے ۔اس نے میوے اور سبزیاں اگائی ہیں تاکہ انسان ان سے بہرہ مند ہوجائیں ۔ان میوؤں اور سبزیوں میں وٹامن، پوٹاشیم، ڈائٹری فائبر اور فولک ایسڈ جیسے کارآمد اجزاء پائے جاتے ہیں جو انسانی صحت کے لئے بہت ہی ضروری ہیں ۔یعنی ان متوازی غذائی اجزاء کا انسان کی نشونما کے ساتھ گہرا تعلق ہے اور سائنس نے بھی تحقیقات کرکے بتایا ہے کہ اگر انسان ان متوازی غذائی اجزاء والی سبزیوں اور میؤں کا استعمال کرے تو انسان صحت مند رہ جائے گا مگر ہم میں سے اکثر ایسی غذاؤں اور سبزیوں کو استعمال میں نہیں لاتے ہیں بلکہ اُن غذاؤں کا استعمال کرتے ہیں جو ہمارے لئے نقصان دہ ہیں ۔
 آج آپ کو سبزیوں کے بارے میں جانکاری فراہم کریں گے تاکہ قارئین بھی ان سبزیوں میں موجود فائدہ مند اجزاء سے واقف ہوکر ان کا بھرپور استعمال کرتے رہیں تاکہ ان کی صحت بھی اچھی رہے کیونکہ ان کی صحت کا خیال رکھنا بھی ہمارے لئے معنی رکھتا ہے ۔یہ سبزیاں ہمارے گھروں میں کثرت سے ملتی ہیں اور سائنس کی تحقیق اس نتیجے پر پہنچی ہے اور کہا ہے کہ بیماریوں سے بچنے کیلئے سبزیوں کا استعمال کرنا بہت ہی ضروری ہے۔ امریکہ کے نیشنل سینٹر فار کمپلیمینٹری اینڈ اینٹیگریٹیو ہیلتھ نے اپنے جریدے میں سبزیوں کی افادیت اور ان کے استعمال کے بارے میں لکھا ہے کہ اگر انسان سبزیوں کا استعمال ایک اچھے طریقے سے کرے تو اس کو معالج کے پاس جانے کی ضرورت کبھی نہیں پڑیگی ۔اس لئے انہوں نے سفارش کی ہے کہ ساگ، بندگوبھی، پالک، گاجر، مٹر، بروکولی، اور چقندر کا استعمال کثرت سے کریں ۔اس کے علاوہ یہ سبزیاں بازاروں میں سستی داموں پر بھی ملتی ہیں۔ 
1۔ساگ:-ساگ ایک سبز پتی والی سبزی ہے جو بہت سارے علاقوں میں کثرت کے ساتھ پائی جاتی ہے۔ اس کے ایک کپ میں 7کیلوریز توانائی ہوتی ہے اور یہ صحت کیلئے بہت ہی فائدہ مند سبزی ہے۔اس میں وٹامنA، C اورK پایا جاتا ہے۔ سائنس دانوں کی تحقیق کے مطابق جن لوگوں کی کولیسٹرول لیول زیادہ ہو، ان کیلئے ساگ فائدہ مند ہے ۔اس کے علاوہ اگر ساگ کا رس نکال کر ایسے اشخاص کو بھی پلایا جاسکتا ہے جن کا ہائی بْلڈ پریشر ، خون میں کولیسٹرول لیول زیادہ اور شگر لیول زیادہ ہو ۔یہ رس پینے سے ان کا بلڈ پریشر، کولیسٹرول لیول اور بلڈ شوگر لیول متوازن رہتا ہے اور ماہرین کا کہنا ہے کہ ساگ کو سلاد اور سینڈ وِچ میں بھی استعمال کرسکتے ہیں کیونکہ کچا ساگ استعمال کرنے سے یہ اور بھی فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے۔
2۔پالک:-پالک میں لوہا( IRON) کافی مقدار میں پایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ اس میں کیلشیم، وٹامن، اور اینٹی آکسیڈینٹس پائے جاتے ہیں۔ ماہرین کے مطابق پالک کے ایک کپ میں 7کیلوریز توانائی پائی جاتی ہے ۔تحقیق کے مطابق پالک کے پتے بھی بلڈپریشر کو توازن میں رکھنے کی قوت رکھتے ہیں۔
3۔مٹر:-مٹر مٹر ایک قسم کی میٹھی اور آمیزش والی سبزی ہے اور ماہرین کے مطابق اس کے پکائے ہوئے ہر ایک کپ میں 134کیلوریز توانائی پائی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ مٹر میں 9گرام فائبر، 9گرام پروٹین اور وٹامن A،B،C،D اور K پائے جاتے ہیں جو انسان کو تندرست رکھنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔
4۔چقندر:-ماہرین کے مطابق چقندر کا رس پینے سے بھی بلڈپریشر توازن میں رہتا ہے۔ چقندر کے کٹے ہوئے ایک کپ میں 58کیلوریز توانائی کے علاوہ 442ملی گرام پوٹاشیم بھی پایا جاتا ہے ۔ماہرین صحت کے مطابق چقندر کا رس دل کو صحت مند رکھنے کیلئے بھی مفید ہے اور ذیابیطس میں بھی یہ کافی کارآمد ثابت ہوا ہے۔
5۔گاجر:-گاجر بِیٹاکیروٹین سے بھرپور مزیدار سبزی، جلد کے خلیات کو تازگی بخشتے ہیں اور ایک طاقتور اینٹی آکسیڈنٹ کا کام کرتے ہیں۔ماہرین کے مطابق گاجر کھانے سے جھریوں سے تحفظ ملتا ہے ۔ان میں وٹامنA کافی مقدار میں پایا جاتا ہے جو آنکھوں کی بینائی کیلئے بہت ضروری ہے۔
6۔پھول گوبھی:-پھول گوبھی کے ایک کپ میں 27کیلوریز کے علاوہ کافی مقدار میں وٹامنC اور وٹامنK پایا جاتا ہے۔ اس میں ایک قسم کا آکسیڈنٹ ہوتا ہے جس کو اِنڈول-3 کاربینول(I3C) بھی کہتے ہیں ۔ماہرین کے مطابق اس سے چھاتی کے کینسر سے تحفظ ملتا ہے ،دل کو تازگی پہنچاتا ہے اور بدہضمی کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ ہر ایک کیلئے سپر فوڈ ہے ۔اس میں شامل اینٹی آکسیڈنٹ ہمارے جسم کو عمر بڑھنے کے نتیجے میں ہونے والے نقصانات سے بچانے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ یا یوں کہہ سکتے ہیں کہ قبل از وقت بڑھاپے سے بھی تحفظ ملتا ہے۔
7۔دھنیا:-دھنیا کے ایک چوتھائی کپ میں3.008 کیلوری توانائی کے علاوہ پروٹین، کاربوہائیڈریٹ اور وٹامنC بھی پائے جاتے ہیں۔ دھنیا جوڑوں کے درد میں مفید ہونے کے علاوہ محرک دوران خون وقلب اور دیگر امراض میں بھی کارآمد ثابت ہوا ہے۔
اس کے علاوہ بھی ایسی بہت ساری سبزیاں پائی جاتی ہیں جن کے کھانے سے انسان بہت ساری بیماریوں سے محفوظ رہ سکتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق جو لوگ زیادہ تر سبزیاں استعمال کرتے ہیں ،ان کو بیماریاں لاحق ہونے کے خطرات بہت ہی کم ہوتے ہیں۔ بہت سارے لوگ ایسے بھی ہیں جو سبزیوں کا استعمال کرنے کے بجائے گوشت کا زیادہ استعمال کرتے ہیں ۔وہ بہت سی بیماریوں کو دعوت دیتے ہیں جن میں کینسر، ہائی بلڈپریشر، ہائی کولیسٹرول لیول، ہائی بلڈ شوگر، ذیابیطس، اور امراض قلب جیسی بیماریاں بھی شامل ہیں ۔گوشت کا زیادہ استعمال کرنے سے انسانوں کی عمریں بھی گھٹتی ہیں اور لوگ چھوٹی عمر میں ہی جوان مرگ ہوجاتے ہیںجبکہ بہت سارے لوگ حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے بھی فوت ہوجاتے ہیں ۔اس لئے ہمیں اپنی اور اپنے بچوں کی صحت کا خاص خیال رکھنا چاہیے اور متوازن غذائی اجناس کا ہی استعمال کرنا چاہئے۔ ان کو سبزیوں کی افادیت سے واقف کرانا چاہیے۔صحتمند رہنے سے ہمارا گھر بھی خوشحال رہ سکتا ہے اور خوشحال گھر میں خوشیوں کے پھول کھلتے ہیں اور ناخوش گھر میں بیماریاں اپنا گھر کرتی ہیں اور معاشرہ بھی بیمار اور ناتواں ہوجاتا ہے۔
ای میل۔Atharbashir.mir3@gmail.com
موبائل نمبر۔7006259067