تازہ ترین

’تحقیق اور ایجادات کے طریقہ کارسے متعلق حکمت عملی پر عملدرآمد ‘

ایس پی کالج میں ورکشاپ منعقد،مقررین کا بین الضابطہ تحقیق کے تصور پر زور

تاریخ    22 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


سرینگر//کمشنر سیکرٹری اعلیٰ تعلیم طلعت پروز روحیلہ نے کل یہاں ایس پی کالج میں ’تحقیق اور ایجادات کے طریقہ کارسے متعلق حکمت عملی پر عملدرآمد‘کے موضوع پر ایک روزہ ورکشاپ کا اِفتتاح کیا۔ورکشاپ کا اِنعقاد ایس پی کالج سری نگر کے اِشتراک سے محکمہ اعلیٰ تعلیم نے کیا تھا۔اِس موقعہ پرڈائریکٹر کالجز پروفیسر ایم وائی پیرزادہ ، نوڈل پرنسپل کشمیر ڈویژن کالجز پروفیسر یاسمین عشائی ، ایڈیشنل سیکرٹری محکمہ اعلیٰ تعلیم سنجیورانا،کشمیر ڈویژن کے مختلف کالجوں کے پرنسپل صاحبان ااور مختلف یونیورسٹیوں اور تحقیقی اداروں کے ماہرین تعلیم بھی موجود تھے۔ ورکشاپ کے اِفتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے طلعت پرویز نے بین الضابطہ تحقیق کے تصور پر زور دیا اورویسٹ منیجمنٹ ، آبی آلودگی اور بائیو ایندھن جیسے مقامی تناظر میں کچھ تحقیقی مسائل پر روشنی ڈالی ۔ اُنہوں نے محققین پر زور دیا کہ وہ معاشرے کو درپیش مسائل کا حل تلاش کریں۔طلعت پرویز نے کہاکہ مستقبل میں جموں وکشمیر میں تحقیقی کاموں کو فروغ دینے کے لئے بین الاقوامی تحقیقی آرگنائزیشنوں کے ساتھ تعاون کیا جائے گا۔کمشنر سیکرٹری نے کہا کہ تحقیقی اِداروں کے قیام کی ضروریات پورا کرنے کے لئے یہ ورکشاپ مختلف ڈومنیز کے محققین کو دانستہ طور پر سمجھنے میں مدد فراہم کرے گی ۔ڈائریکٹر کالج ڈاکٹر ایم وائی پیرزادہ نے اپنے مختصر خطبے میں کہا کہ کالج کی سطح پر قائم کی جانے والی تحقیق اور اختراعی مراکز اور سپوک ماڈل کا تصور تحقیقی کام میں بہت فائدہ مند ثابت ہوگا۔نوڈل پرنسپل ڈاکٹر یاسمین عشائی نے اَپنے اِفتتاحی کلمات میں تمام مہمانوں کا خیرمقدم کیا اور کمشنرسیکرٹری کا شکریہ ادا کیا کہ اُنہوں نے کالجوں میں تحقیق کی ثقافت کو متعارف کرانے کے لئے پہل کی۔پرنسپل ایس پی کالج پروفیسر خورشید احمد خان نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ورکشاپ کا مقصدایسٹیبلمنٹ کے لئے رہنما اصولوں اور مستقبل کی حکمت عملی وضع کرنے کیلئے مشترکہ پلیٹ فارم پر مختلف ڈومینز کے مراکز ، ترجمانوں اوراتالیق کو اکٹھا کرنے کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے تعلیمی اور تحقیقی مراکز میں طلباء کے کیریئر کی ترقی اور تحقیقی ترقی کے کردار پر بھی روشنی ڈالی۔یہ بات قابل ذِکرہے کہ یہ ’’ ریسرچ اینڈ انوویشنز‘‘ کے بارے میں اپنی نوعیت کا پہلا پروگرام ہے جس میں بورڈ کے نامور تعلیمی اور تحقیقی اداروں جیسے این آئی ٹی سری نگر، یونیورسٹی آف کشمیر، اِسلامی یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ، سینٹرل یونیورسٹی آف کشمیر ، اِنسٹی چیوٹ آف میوزک اور فائن آرٹس جے اینڈ کے ، آئی سی ایم آئی آئی سری نگر، آئی سی ایس آئی سری نگر ، اکیڈیمی آف آرٹس ، کلچر اینڈ لینگویجزشامل ہیں، کا اہتمام محکمہ اعلیٰ تعلیم کے دائرہ کار میں کالج سطح پر کیا گیا۔اس موقعہ پر کمشنر سیکرٹری نے کالج نیوز لیٹر ’’ دی پرتاب پوسٹ 2020 ‘‘ بھی جاری کیا۔