تازہ ترین

گھنٹہ گھر پر ترنگا لہرانے کی کوشش ناکام

لال چوک میں کئی کارکن حراست میں لئے گئے

تاریخ    27 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
سرینگر// پولیس نے پیر کی صبح بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کچھ کارکنوں کو اس وقت حفاظتی تحویل میں لے لیا جب وہ تاریخی لال چوک کے گھنٹہ گھر پر 'ترنگا' لہرانے کی کوشش کی۔کپوارہ سے تعلق رکھنے والے بی جے پی کے کارکن بظاہر لوگوں کے غیض وغضب سے بچنے کے لئے پیر کی صبح لال چوک میں نمودار ہوئے اور 'بھارت ماتا کی جے، بی جے پی یونٹ کپوارہ زندہ باد' جیسے نعرے لگاتے ہوئے تاریخی گھنٹہ گھر کی جانب بڑھنے لگے۔ تاہم جموں و کشمیر پولیس نے نقص امن کے خدشے کے پیش نظر بی جے پی کے ان کارکنوں کو ترنگا لہرانے سے قبل ہی حفاظتی تحویل میں لے کر پولیس تھانہ کوٹھی باغ منتقل کیا۔بی جے پی کے کارکنوں نے ترنگا لہرانے کی کوشش صبح سویرے اس وقت کی جب اس تجارتی مرکز میں کسی دکاندار نے اپنی دکان کھولی تھی نہ عام شہریوں کی کوئی نقل وحرکت نظر آ رہی تھی۔ تاہم جموں و کشمیر پولیس نے 'یوم الحاق' کے پیش نظر تاریخی لال چوک میں پولیس اور سی آر پی ایف کی تعیناتی پیر کی علی الصبح ہی عمل میں لائی تھی۔ پولیس ذرائع نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا: 'بی جے پی کارکن پیشگی اجازت حاصل کئے بغیر یہاں آئے تھے۔ ہم امن وامان میں خلل ڈالنے کی کسی کو اجازت نہیں دے سکتے ہیں'۔ترنگا لہرانے کے لئے لال چوک آنے والے بی جے پی کارکنوں میں سے ایک کارن کا کہنا تھا: 'میں یہاں سے گپکار اعلامیہ کے دستخط کنندگان کو پیغام دینا چاہتا ہوں، جنہوں نے کہا ہے کہ وہ خصوصی پوزیشن کی بحالی تک ترنگے کو ہاتھ نہیں لگائیں گے، کہ یہاں ہر گھر میں ترنگا لہرایا جائے گا اور یہاں کا ہر ایک نوجوان بھارت کے ساتھ کھڑا رہے گا'۔ بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے ترجمان الطاف ٹھاکر نے بتایا کہ بی جے پی کارکنوں کا ترنگا لے کر لال چوک پہنچنا ان لوگوں کو جواب ہے جو کہتے تھے کہ یہاں کوئی ترنگا نہیں اٹھائے گا۔ انہوں نے کہا: 'آج ان کی آنکھیں کھلنی چاہئیں۔ کشمیر کا ہر ایک نوجوان ترنگے کے لئے اپنی جان قربان کرنے کے لئے تیار ہے۔ یہ کارکن 70 سے 80 کلو میٹر سفر طے کر کے لال چوک پہنچے ہیں'۔قابل ذکر ہے کہ بی جے پی جموں وکشمیر یونٹ نے گذشتہ تین دہائیوں کے دوران کئی بار تاریخی لال چوک میں ترنگا لہرانے کی کوششیں کیں تاہم کشمیر انتظامیہ نے ہر بار امن وامان کے مسئلے کو وجہ کے طور پر پیش کرتے ہوئے ایسا کرنے کی اجازت نہ دی۔
 

تازہ ترین