کرناہ کے سرکاری محکموں میں بنیادی ڈھانچے اور عملہ کی قلت

کئی محکمے سربراہاں کے بغیر ، سب ڈویژن کے لوگ حکام سے نالاں

تاریخ    24 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


اشفاق سعید
سرینگر // کرناہ کے سرکاری محکمہ جات میں سربراہاں اور فیلڈ عملے کی عدم موجودگی کے سبب نہ صرف تعمیراتی کام بری طرح سے متاثر ہو چکے ہیں، بلکہ فیلڈ عملہ بھی نہ ہونے کے نتیجے میں لوگوں کو طرح طرح کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور حکام اس پسماندہ علاقے میں عملے کو تعینات کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہے ۔کرناہ میں تحصیلدار کی کرسی کئی ہفتوں سے خالی پڑی ہے ،گزشتہ ماہ سابق تحصیلدار کی سبکدوشی کے بعد ابھی تک نئے تحصیلدار کی تقرری عمل میں نہیں لائی گئی، جس کے نتیجے میں مقامی لوگوں خاص کر طلاب کو پہاڑی سپیکنگ، پوسٹ میٹرک ، اوراسکالر شپ کیلئے ضروری اثناد کی اجر ائی میں تاخیر ہو رہی ہے۔ مقامی لوگوں کا یہ مطالبہ ہے کہ علاقے میں تحصیلدار کو تعینات کیا جائے، تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔اسی طرح بلاک ٹیٹوال میں بلاک ڈیولپمنٹ افسر کی کرسی بھی خالی ہے اور محکمہ دیہی ترقی اس اسامی کو پُر کرنے میں ناکام ہے اوراس بلاک کی چارج بھی ٹنگڈار بلاک کے بی ڈی او کے پاس رکھی گئی ہے ۔ٹیٹوال بلاک کی اگر بات کی جائے تو یہ بلاک نام نہاد بن چکا ہے کیونکہ یہاں پر کئی اہم سرکاری محکمہ جات کے سربراہان ہی موجود نہیں ہیں، اور یہاں کے سرکاری محکموں کی اضافی چارج ٹنگڈار بلاک کے افسران کو دی گئی ہے ۔ پورے سب ڈویژن میں بلاک ایگریکلچر افسر کی کرسی بھی برسوں سے خالی ہے اس سے قبل بلاک میں ایک افسر تعینات تھا، لیکن جب سے اُس کو یہاں سے تبدیل کیا گیا ہے تو اس کی جگہ کوئی بھی نیا افسر تعینات نہیں ہوا اس بلاک کی چارج بھی کپوارہ میں ایک ضلع افسر کو دی گئی ہے ، یہی نہیں بلکہ محکمہ پشو پالن کرناہ میں بھی عملے کی شدید قلت پائی جاتی ہے، دونوں بلاکوں کیلئے صرف ایک بلاک ویٹنری افسر تعینات ہے ۔ کرناہ کے دونوں بلاکوں کیلئے 2 ویٹنری سرجنوں کی اسامیاں ہیں ،لیکن یہاں صرف ایک افسر ہی دونوں بلاکوں کو سنبھال رہا ہے ۔معلوم رہے کہ اس پورے سب ڈویژن میں 80فیصد لوگو ں کا دارو مدار مال مویشی پالن ہے ،لیکن فیڈ عملے کی یہاں پر 13اسامیاں خالی ہیں، جبکہ سٹاک اسسٹنٹ کی 4اسامیوں کو بھی پُر کرنے میں محکمہ لیت ولعل سے کام لے رہا ہے ۔محکمہ صحت کی اگر بات کی جائے ،تو پورے کرناہ میں ڈاکٹروں کی منظور شدہ 27اسامیوں میں سے صرف 11پر بلاک میڈیکل افسر تعینات ہیں، جبکہ 16 اسامیاںخالی پڑی ہیں،اسی طرح کل 135پر پیرا میڈیکل اسٹاف کی اسامیوں میں سے صرف 65ملازمین ہی کام کر رہے ہیں اور70اسامیاںخالی پڑی ہیں اور محکمہ صحت زبانی جمع خرچ سے کام لے رہا ہے ۔اسی طرح محکمہ آر اینڈ بی ، جل شکتی ، ہاٹیکلچر ، ایگریکلچر ، ، سوشل ویلفیئر ، آئی سی ڈی ایس ، محکمہ بھیڑ پالن، ایجوکیشن ،سمیت دیگر محکمہ جات بھی برسوں سے عملے کے بغیر ہیں اور اس جانب کوئی بھی دھیان نہیں دیا جا رہا ہے ۔
 

تازہ ترین