پونچھ میں پولیس پارٹی پر دستی بم حملہ

فورسز نے معاملہ کی تفتیش شروع کردی

تاریخ    24 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


سمت بھارگو
راجوری//جمعرات کے واقعہ کے بعد پولیس کے ساتھ ساتھ دیگر سیکورٹی فورسز اورسراغ رساں ایجنسیوں نے بھی تحقیقات شروع کردی ہیں ۔واضح رہے کہ پونچھ کے کلائی کے قریب پولیس کے فلائنگ اسکواڈ پر دستی بم پھینکاگیا تھا جس کے ساتھ معاملے کی تفتیش شروع کردی گئی اور کلائی و آس پاس کے علاقوں میں تلاشی لی جارہی ہے ۔یہ واقعہ جمعرات کی شام ساڑھے 8بجے کے قریب پیش آیا جب پولیس تھانہ پونچھ کا ایک فلائنگ اسکواڈ کلائی پل کے قریب ناکہ پر تھاجس پرایک دستی بم پھینکا گیا جوپھٹنے میں ناکام رہا ۔پولیس کے عہدیداروں نے کشمیرعظمیٰ کو بتایا کہ اس واقعہ کے بعد پورے علاقے کو گھیرے میں لے لیا گیا تھا اور رات میں کلائی پل اور قریبی علاقوں میں تلاشی لی گئی۔انہوں نے بتایاکہ جمعہ کو بھی کلائی اور آس پاس کے دیہات کے علاقے میں تلاشی لی گئی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن پونچھ میں ایک مقدمہ درج کیا گیا ہے اور معاملے کی چھان بین جاری ہے۔حکام نے بتایا’’تحقیقات جاری ہیں لیکن ابھی تک کسی کو حراست میں نہیں لیا گیا ہے‘‘۔انہوں نے مزید کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ یہ پہلا واقعہ معلوم ہوتا ہے کہ نامعلوم شخص نے دستی بم پھینکا ۔عہدیداروں نے بتایا’’پولیس پارٹی کی طرف دستی بم کی جانچ کی جارہی ہے جو حجم میں کم اور اور نسبتاًچھوٹاہے ‘‘۔سینئر سپرانٹنڈنٹ پولیس پونچھ رمیش انگرل نے بتایا کہ پونچھ پولیس اسٹیشن میں قانون کے متعلقہ دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے اور معاملے کی تحقیقات جاری ہے۔انہوں نے بتایا’’دستی بم ہمارے پاس ہے اور اس کی جانچ جاری ہے جس کے ساتھ ہی علاقے میں تلاشی بھی لی گئی لیکن کسی کو حراست میں نہیں لیا گیا اور ہم اس معاملے پر کارروائی کر رہے ہیں‘‘۔
 

تازہ ترین