تازہ ترین

آبی گذرمیں پانی کی شدیدقلت سے لوگ پریشان

محکمہ جل شکتی کے خلاف غم و غصہ،احتجاج کی دھمکی

تاریخ    23 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//آبی گذر میں پینے کے پانی کی عدم دستیابی کے باعث آبادی کو شدید پریشانیوں کا سامنا ہے ۔لوگوں کا الزام ہے کہ محکمہ جل شکتی علاقے میں پانی کی سپلائی بحال کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ علاقے میں گذشتہ کئی ہفتوں سے پانی کی سپلائی متاثر ہے اور متعلقہ محکمہ لوگوں کو درپیش مشکلات دور کرنے میں پوری طرح ناکام ہوچکا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ علاقے میں کئی ہفتوںسے پانی کا سپلائی نظام مفلوج ہے جس کے نتیجے میں مکینوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔لوگوں کا الزام ہے کہ محکمہ جل شکتی علاقے میں پانی کی سپلائی بحال کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ علاقے میںپانی کی قلت سے ہارہار مچی ہوئی ہے اور لوگوں کو پینے کے لئے پانی کا ایک صاف قطرہ بھی دستیاب نہیں ہے جس کے نتیجے لوگ پریشان ہیں ۔شبیر احمد نامی شہری نے بتایا کہ محکمہ صحت عامہ جس کا نام اب جل شکتی محکمہ رکھاگیا ہے، کی غیر سنجیدگی اور عدم فرض شناسی کی وجہ سے علاقہ کی آبادی میں غم و گصہ کا لائو پکا رہا ہے اور اگر جلد ازجلد علاقہ میں پانی کی سپلائی کو بحال نہیں کیا گیا تو وہ احتجاج پر مجبور ہوجائیں گے ۔مقامی لوگوں نے مزید کہا کہ اگرچہ انہوں نے کئی مرتبہ محکمہ کو آگاہ کیا کہ علاقے میںپینے کے صاف پانی کی سپلائی کو یقینی بنایاجائے تاہم آج تک ایسا نہیںکیا گیا ۔ مقامی آبادی نے مطالبہ کیا کہ علاقے میں جلد از جلد پینے کے صاف پانی کی سپلائی کو بحال کیا جائے ۔