۔22 اکتوبرکی یادوں پر مبنی قومی سمپوزیم اور نمائش منعقد

ہر فرد ہمارے دل اور جسم کا اٹوٹ حصہ

تاریخ    23 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی

  دہشت گردی اِنسانیت کی اِجتماعی دُشمن ہے،مذہبی یگانگت اور اِنسانیت کیلئے محبت پھیلائیں:لیفٹیننٹ گورنر 

 
سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے کہا ہے کہ22 اکتوبر 1947 کشمیر کی تاریخ کا ایک ایسا لمحہ ہے جس میں ہمیں اَپنے بزرگوں اور نوجوان نسل کو یہ جانکاری دینی لازمی ہے کہ پاکستان نے ہمیں تقسیم کرنے کی کوشش بھی کی اور یہاں تشدد بھی برپا کیا۔22 اکتوبر 1947ء کی یادوں پر مبنی ایس کے آئی سی سی میں قومی سمپوزیم اور نمائش کا افتتاح کرنے کے دوران اُنہو ںنے کہا کہ یہ دو روزہ سمپو زیشم تاریخ کے دریچوں کو کھولنے کا کام کریگا۔اُنہوں نے کہا کہ 73برسوں کے بعد بھی پاکستان کے آپریشن گلمرگ کی یادیں تازہ ہیں۔دو روزہ تقریب 22 اور 23؍اکتوبر نیشنل میوزیم انسٹی چیوٹ آف ہسٹری آف آرٹ ، کنزرویشن اینڈ میوزولوجی کی جانب سے ایس کے آئی سی سی میں منعقد کیا جارہا ہے ۔’’22؍ اکتوبر 1947ء کی یادوں‘‘ پر مبنی ایک کتاب بھی اِس موقعہ پر جاری کی گئی ۔مرکزی وزیر مملکت برائے ثقافت و سیاحت پر ہلاد سنگھ پٹیل نے تقریب کی صدارت بذریعہ ورچیول طریقۂ کار کی۔دہشت گردی کو اِنسانیت کی اِجتماعی دشمن قررا دیتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ دہشت گردی میں حقیقی طور ملوث قوتوں کو تمام دنیا جانتی ہے اور وقت کا تقاضا ہے کہ ہم مذہبی یگانگت اور محبت کو پھیلا کر منفی قوتوں کو شکست فاش دیں۔اُنہوںنے کہا کہ ہم نے اَپنی نئی نسل کویہ بتانے کا فیصلہ کیا ہے کہ آفاقی بھائی چارے کرنے والی اس سر زمین کو کیسے 22؍اکتوبر 1947ء کو روند ڈالا گیاتھا۔یہ ان کا مشن تھا کہ امن پسند لوگوں کے دلوں میں مذہبی منافرت پھیلائی جائے۔ بریگیڈیئرراجندر سنگھ اور اس کے دستوںنے ہماری سرحدو ںکی اَپنی جانیں دے کر حفاظت کی۔انہوں نے مقبول شیروانی کا ذکر چھیڑتے ہوئے کہا: 'جب بربریت چل رہی تھی تو مقبول شیروانی نے اس کے خلاف آواز اٹھائی لیکن ان کو قتل کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام نے ان دنوں زور سے نعرے لگائے تھے کہ 'حملہ آور خبر دار، ہم کشمیری ہیں تیار'۔سنہا نے کہا کہ جموں و کشمیر کا ہر فرد ہمارے دل اور جسم کا اٹوٹ حصہ ہے۔انہوں نے کہا: 'دہشت گردی عزت و وقار کا سب سے بڑا دشمن ہے اور ہم سب جانتے ہیں کہ اس کا پالنے والا کون ہے'۔انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر اور ملک کے جوانوں نے قربانیاں دی ہیں اور دشمن کا مقابلہ کرنے کے لئے ہمارے حوصلے بلند ہیں۔جموں وکشمیر کے ایک سو زائد معروف اَفراد کی جانب سے ثقافتی ورثے کی اہمیت کے حامل مقامات کے تحفظ اور بحالی جیسے مبارک منڈی جموں ،شیر گڈھی سرینگر کے ضمن میں لیفٹیننٹ گورنرنے جموںوکشمیر کی ثقافتی ورثے کے تحفظ کے حکومت کے عز م کا اعادہ کیا ۔اُنہوں نے کہا کہ یہ معاملہ متعلقہ حکام کے ساتھ اُٹھایا گیا ہے اور جموںوکشمیر چیف سیکریٹری کے تبادلہ خیال کے بعد مرکزی وزارتِ ثقافت نے شیر گڈھی اور مبارک منڈی جموں کی بحالی کا یقین دِلایا ہے۔

تازہ ترین