تازہ ترین

مگھر بل باغ کے نجی ہسپتال میں خاتون کی موت

لواحقین کا احتجاج اور توڑ پھوڑ،ڈاکٹروں پر لاپرواہی کا الزام

تاریخ    22 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//ڈاکٹروں کی مبینہ لاپروائی کے نتیجے میںمگھر بل باغ میں واقع ایک نجی اسپتال میں خاتون کی موت کے بعد لواحقین نے احتجاجی مظاہرے کرتے ہوئے اسپتال کی توڑ پھوڑ کی ۔ مہلوک خاتون کے اہل خانہ نے بتایا کہ3بچوں کی ماں 45سالہ خاتون جو کہ داندر کھاہ بٹہ مالو کی تھی، کو گزشتہ ہفتہ اسپتال میں اس وقت علاج و معالجہ کیلئے داخل کر ایا گیا تھا جب انہوں نے چھاتی میں درد کی شکایت کی تھی ۔ افراد خانہ کے مطابق جونہی خاتون کو اسپتال میں علاج و معالجہ کیلئے داخل کر دیا گیا تو ڈاکٹروں نے ان کی یقین دہانی کرائی کہ وہ بالکل ٹھیک ہے تاہم بدھ کو وہ اسپتال میں اس وقت موت کی آغوش میں چلی گئی جب اس کا آپریشن کیاگیا۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ خاتون کی موت ڈاکٹروں کی مبینہ لاپرواہی کے نتیجے میں جراحی کے عمل کے دوران اندرونی زخموں سے واقع ہوئی ۔خاتون کی موت کے ساتھ ہی لواحقین نے اسپتال کے باہر زور دار احتجاجی مظاہرے کرتے ہوئے اسپتال عمارت کو بھی نقصان پہنچایا ۔ اسپتال کے ایک ڈاکٹر نے بتایا کہ خاتون نے درد کی شکایت کی جس کی وجہ سے مریضہ کی جان چلی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ مریضہ کے تیمارداروں اور لواحقین نے اسپتال عمارت کو نقصان پہنچایا ۔ احتجاج کے دورا ن کچھ افراد زخمی بھی ہو گئے ۔