شاہراہ پر بھاری ٹریفک رواں دواں | جگہ جگہ ٹریفک جام سے مسافروں کو مشکلات

تاریخ    20 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


ایم ایم پرواز
رام بن//جموں سرینگر قومی شاہراہ کے ناشری رام بن اور رام بن بانہال کے درمیان گاڑیوں کی آمدورفت آہستہ آہستہ منزل کی طرف بڑھ رہی ہے اور توقع ہے کہ ایسی صورتحال آدھی رات تک جاری رہے گی کیونکہ جموں اور اودھم پور سے وادی کشمیر کے لئے پیر کو دو دن بعد بھاری ٹریفک کی اجازت دی گئی۔تاہم ٹریفک پولیس کی جانب سے طے شدہ وقت کے ساتھ شاہراہ پر جمعہ کے علاوہ دونوں اطراف سے ہلکی موٹر گاڑیاں چلانے کی اجازت ہے۔ناشری اور بانہال کے مابین شاہراہ کی  چوڑائی اور کھدائی کا کام مختلف مقامات پر جاری ہے جس سے بھی پریشانی کاسامناکرناپڑرہاہے ۔ایک ٹرک ڈرائیور کرنیل سنگھ نے بتایا کہ مختلف مقامات پر کھدائی کے کام کی وجہ سے سڑک کو نقصان پہنچا ہے اور سڑک کی چوڑائی کم ہونے سے ٹریفک جام ہوتاجارہاہے۔فور لین پروجیکٹ کا جاری کام مسافروں کے لئے اذیت کا باعث بن گیا کیونکہ ادھم پور سے چنینی ناشری ٹول پوسٹ، ناشری سے رام بن اور رام بن سے بانہال تک طویل ٹریفک جام کا مشاہدہ کیا جاسکتا ہے۔ ایک اور ڈرائیور بشیر احمد نے بتایا کہ ٹریفک پولیس اہلکاروں کی عدم تعیناتی نے صورتحال کو مزید خراب کردیاہے۔
دوسری طرف شاہراہ سے وابستہ ٹھیکیدار کمپنیوں نے سڑک پر گاڑیوں کے ٹریفک کی زیادتی کوجام کے لئے ذمہ دار قرار دیاہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ٹریفک کا بہت زیادہ بہاؤ بڑی پریشانی کا باعث ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ کھدائی کا کام مقررہ مدت میں مکمل کرلیا جائے گا۔ایک ٹریفک پولیس اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی خواہش پر بتایاکہ ٹھیکیدار کمپنیوں کو ضروری مرمت کے لئے باقاعدگی سے سخت ہدایات جاری کی جاتی ہیں اور مختلف تعمیراتی مقامات پر کھدائی کا کام مقررہ مدت میں مکمل کرنے کے لئے باقاعدگی سے ہدایت جاری کی جاتی ہے۔
 

تازہ ترین