تازہ ترین

جھیل ولر میں مچھلیوں اور سنگھاڑوں کی پیداوار میں مسلسل کمی | 75 ہزار ماہی گیروں اور سنگھاڑوں کشوں کا روزگار خطرے میں

تاریخ    19 اکتوبر 2020 (30 : 12 AM)   


عازم جان
بانڈی پورہ//شہرہ آفاق ولر جھیل میں مچھلیوں اور سنگھاڑے کی پیداوار بتدریج گھٹ رہی ہے ۔ جھیل کے کنارے رہائش پذیر 75ہزار ماہی گیرروزگار سے محروم ہورہے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ دفتر کے صحن میں سنیچر وار کو ماہی گیروں کی بڑی تعداد نے ماہی گیر ایسوسی ایشن کے  صدر علی محمد ڈار کی قیادت میں احتجاج کرتے ہوئے محکمہ فشریز اور ضلع انتظامیہ کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے بتایا کہ ولر جھیل میں سطح آب روز بروز کم ہورہی ہے جس کی وجہ سے بعض عناصر نیٹ ڈال کر مچھلیوں پکڑرہے ہیں۔احتجاجی ضلع صدر نے بتایا کہ محکمہ فشریز بانڈی پورہ کے افسران سے اس گھمبیر صورتحال کے متعلق کئی باردرخواست کی گئی اور اپیل کی کہ ولر جھیل میں ہورہی خلاف ورزیوں پر قدغن لگا ئیں لیکن کوئی کارروائی نہیں ہورہی ہے۔ایسوسی ایشن نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سہنا سے مطالبہ کیا کہ ولر جھیل میں مچھلیوں اوردیگر پیداوار کو محفوظ رکھنے کیلئے اقدامات کئے جائیں ۔