تازہ ترین

۔850 میگاواٹ ریتلے پاور پروجیکٹ عنقریب حقیقت بنے گا | NHPC پروجیکٹوں کا جائزہ لیاگیا، پکل ڈول ، کیرو ،کور منصوبوں کیلئے طریقہ کاروضع

تاریخ    12 اکتوبر 2020 (30 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے راج بھون میں ایک میٹنگ کے دوران جموںوکشمیر کی یونین ٹریٹری میں قومی پن بجلی پاور کارپوریشن کے مختلف پروجیکٹوں پر پیش رفت کا تفصیلی جائزہ لیا۔ لیفٹیننٹ گورنر کی مداخلت سے 850میگاواٹ نئے مشترکہ رتلے پن بجلی پروجیکٹ کو حتمی شکل دی گئی جس کی تکمیل سے خطے میں بجلی کی موجودہ پیداواری صلاحیت میں بہتری آئے گی۔ میٹنگ میں یہ بھی فیصلہ لیا گیا کہ ضمنی ایم او یو کو بھی ایم او پی ( جی او آئی )، جی او جی کے( جے کے ایس پی ڈی سی) اور این ایچ پی سی کے مابین غور وخوض کے لئے حتمی شکل دی جائے گی۔دوران میٹنگ پکل ڈل ، کیرو ، اور کور پن بجلی پروجیکٹوں کی تعمیر میں سرعت لانے پر بھی مفصل غور و خوض ہوا ۔اِن پروجیکٹوں کی تکمیل سے 54,593 کروڑ روپے کی لاگت سے 6,298میگاواٹ بجلی کی پیداواری یقینی بنے گی ۔ اس طرح سے خطبے میں بجلی کی پیدواری صلاحیت میں اِضافہ ہوگا۔چیئر مین اینڈ منیجنگ ڈائریکٹر ( سی ایم ڈی) این ایچ پی سی لمٹیڈ نے لیفٹیننٹ گورنر کو جموںوکشمیر میں این ایچ پی سی کے پاور سٹیشنوں کی پیدواری صلاحیت کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی ۔اُنہوں نے یوٹی میں این ایچ پی سی کے تحت زیر تعمیر پروجیکٹوں کی پیش رفت کے بارے میں اُنہیں بتایا۔ ا ِس موقعہ پر جموںوکشمیر کے این ایچ پی سی کے تحت مکمل کئے گئے پروجیکٹوں اور ان کی پیداواری صلاحیت کے بارے میں بھی جانکاری دی گئی جن میں سلال (مرحلہ اوّل و دوم) 690 میگاواٹ اوڑی اوّل480میگاواٹ، دل ہستی 390میگاواٹ ، سیوا دوم 120میگاواٹ ، اوڑی دوم 240میگاواٹ اور کشن گنگا 330میگاواٹ شامل ہیں جن کی مجوزہ پیداوارصلاحیت 2250میگاواٹ ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے اِس موقعہ پر جاری پروجیکٹوں کی تکمیل کے لئے ہدایات دیں اور مختلف ایجنسیوں کے مابین قریبی تال میل پر زور دیا ۔انہوں نے پروجیکٹوں کی تکمیل میں درپیش رکاوٹوں کو دور کرنے کی بھی ہدایت دی۔لیفٹیننٹ گورنر نے این ایچ پی سی کی جانب سے صحت ، تعلیم ، سوچھ بھارت اور پیش وارانہ تربیت شعبوں میں کار پوریشن سوشل ریسپانسپلٹی کے جاری کاموں کے بارے میں بھی تفصیل طلب کی۔ انہوں نے این ایچ پی سی پروجیکٹوں کے ذریعے جموںوکشمیر کے شہریوں کے لئے بلواسطہ اور بلا واسطہ روزگار کی فراہمی کے بارے میں تفاصیل طلب کیں۔ اُنہیں بتایا گیا کہ این ایچ پی سی نے کٹھوعہ ،اودھمپور ، جموں ، سری نگر اور بڈگام اضلاع میں دیہی علاقوں تک بجلی پہنچانے میں اہم رول ادا کی۔ 

تازہ ترین