تازہ ترین

ہیپاٹائٹس کے علاج میں بڑی کھوج کیلئے تین سائنسدانوں کو نوبل انعام

تاریخ    6 اکتوبر 2020 (00 : 02 AM)   


اسٹاک ہوم// ہیپاٹائٹس کے علاج میں اہم تعاون پیش کرنے پر تین سائنسدانوں کو سنہ 2020 کا نوبل انعام دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔نوبل انعام دینے والی کمیٹی نے پیر کو ایک بیان جاری کر کے کہا ہے کہ رواں برس کا نوبل انعام ان تین سائنس دانوں کو دیا جائے گا جنہوں نے خون سے پیدا ہونے والے ہیپاٹائٹس کے خلاف جنگ میں فیصلہ کن تعاون پیش کیا ہے۔ یہ ایک صحت کاعالمی مسئلہ ہے جو دنیا بھر کے لوگوں میں سیروسس اور جگر کے کینسر کا سبب بنتا ہے۔کمیٹی نے بتایا کہ سائنس دان ہاروی جے آلٹر ، مائیکا ہیوگٹن اور چارلس ایم رائس نے ان ذرات کو دریافت کیا جس سے ہیپاٹائٹس سی وائرس کی شناخت ہو سکتی ہیں۔ اس دریافت سے قبل دوسرے سائنس دانوں نے ہیپاٹائٹس اے اور بی وائرس ہونے کی دریافت میں کافی پیشرفت کی تھی ، لیکن خون سے پیدا ہونے والے ہیپاٹائٹس کے معاملات میں ابھی بھی بہت سارے سوالات موجود ہیں۔ہیپاٹائٹس سی وائرس کی دریافت نے دائمی ہیپاٹائٹس کے بقیہ معاملوں کی وجویات کا پتہ لگا یا اور خون کے ٹیسٹ اور نئی ادویات کو ممکن بنایا جس نے لاکھوں لوگوں کی جان بچائی۔ہیپاٹائٹس دراصل وائرل انفیکشن کی وجہ سے ہوتا ہے اور اگرچہ شراب کا زیادہ استعمال ، ماحولیاتی آلودگی ، اور آٹومائین امراض بھی اس مرض کی متعدد اہم وجوہات ہیں۔ کمیٹی نے کہا کہ اس دریافت کے تعلق سے کہا ’’ وائرل بیماریوں کے خلاف جاری لڑائی میں ہیپاٹائٹس سی وائرس کی دریافت ایک تاریخی کامیابی ہے۔ دریافت کے لئے تینوں سائنسدانوں کا شکریہ۔ وائرس کے لئے انتہائی حساس خون کے ٹیسٹ دستیاب ہیں‘‘۔یواین آئی۔ ک ج
 

تازہ ترین