تازہ ترین

جسمانی طور خاص افراد پھر احتجاج کی راہ پر | مطالبات کو لیکر12 اکتوبر کوسول سیکرٹریٹ گھیرائو کا اعلان

تاریخ    1 اکتوبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
 سرینگر//اپنے مطالبات منوانے کیلئے ایک مرتبہ پھر جسمانی طور نا خیز افراد نے احتجاج کی راہ لینے کا اعلان کرتے ہوئے واضح کر دیا کہ اگران کے جائز مطالبات و مسائل جلد از جلد حل نہیں کئے گئے تو وہ 12 اکتوبر کو پریس کالونی سے سول سیکرٹریٹ سرینگر کی طرف احتجاج مارچ کر کے سیکرٹریٹ کے سامنے دھرنا دیں گے ۔جموں کشمیر ہینڈی کپیڈ ایسوسی ایشن کے صدر عبد الرشید بٹ کی صدارت میں منعقدہ ایک ہنگامی اجلاس میں جموں وکشمیر کے جسمانی طور معذور افراد کے مصائب اور مسائل سے متعلق مختلف امور پر غور وخوض کیا گیا ہے۔اجلاس میں مرکزی سرکاراور جموں و کشمیر کے لیفٹنٹ گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کیا گیا کہ ڈسبلٹی ایکٹ -2016 کو جلداز جلد جموں وکشمیر میں لاگو کیا جائے کیونکہ جموں کشمیر اب ایک مرکزی علاقہ بن چکا ہے۔ برسوں سے لگاتار حکومتیں جسمانی طور پر معذور افراد کے لئے کسی بھی فلاحی اقدامات کو نافذ کرنے میں ناکام رہی ہیں۔ ایسوسی ایشن کے صدر نے کہا کہ اب ہم مرکزی اور ریاستی حکومتوں سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ ہمارے مطالبات پورے کریں کیونکہ ہمیں اس کرونا وائرس اور لاک ڈاون میں بھی بہت سی پریشانیوں کا سامنا ہے۔ اگر ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوئے تو ہم مجبور ہو جائیں گے ۔انہوں نے مزید کہا کہ یکم اکتوبر سے 7 اکتوبر تک جسمانی طور معزور افرادکالی پٹیاں باندھ کر’سیاہ ہفتہ‘ منائیں گے ۔