پیرس میں حملہ ’ملزم نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی‘

تاریخ    27 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


پیرس//فرانس میں طنزیہ کارٹون چھاپنے والے میگزین چارلی ایبڈو کے پرانے دفتر کے باہر چاقو سے حملہ کرنے کے الزام میں گرفتار مرکزی ملزم نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی نے ایک ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ’ملزم نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔‘ پولیس نے مرکزی ملزم سمیت سات افراد کو گرفتار کیا تھا۔اے ایف پی کے مطابق فرانسیسی وزیر داخلہ گیرالڈ ڈرمینن نے کہا ہے کہ ’یہ واضح طور پر اسلامی دہشت گردی کا عمل ہے۔‘انہوں نے ٹی وی چینل فرانس ٹو سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ ہمارے ملک پر نیا خونی حملہ ہے۔ ‘فرانسیسی انسداد دہشت گردی کے پراسیکیوشن کے دفتر نے کہا ہے کہ اس نے ’دہشت گردی سے منسلک قاتلانہ حملے‘ اور ’دہشت گردی کی سازش‘ کے الزام کے تحت تفتیش شروع کر دی ہے۔پیرس میں حملے کے بعد فرانس کے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ایک سنجیدہ واقعہ پیش آیا ہے جس میں ’چار افراد زخمی ہوئے ہیں اور دو افراد کی حالات نازک ہیں۔‘اے ایف پی کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آور کی عمر 18 سال ہے اور وہ تنہا بچے کے طور پر فرانس میں آباد ہوا تھا۔
 

تازہ ترین