سعدہ کدل حضرت بل سڑک کے ایک حصے پر میکڈم نہ بچھانے پر لوگ برہم

حکام سے پوری سڑک کی مرمت کی اپیل

تاریخ    24 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //سعدہ کدل حضرت بل سڑک کے ایک حصے پر میکڈم نہ بچھانے پر مقامی آبادی نے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ پوری سڑک پر میکڈم بچھایا جائے ۔محکمہ آر اینڈ بی نے سعدہ کدل حضرت بل روڑ  کے آدھے حصہ پر میگڈیم بچھایا ہے جبکہ روڑ کے آدھے حصہ کو بغیر میگڈیم کے رکھا گیا ہے۔ سعدہ کدل حضرت بل پر روڈ کے گردنواح میں رہنے والے والے لوگوں نے بتایا کہ اس اہم سڑک پر امرت اسکیم کے تحت گندے پانی کو جھیل ڈل میں جانے سے روکنے کیلئے ڈرین تعمیر کی گئی جسکی وجہ سے یہ سڑک ٹریفک کیلئے نا قابل استعمال بن گئی تھی۔انہوں نے کہا کہ پچھلے چند دنوں سے اس سڑک پر میکڈم بچھانے کا کام شروع ہوا تاہم میکڈم آدھی سڑک پر ہی بچھایا جارہا ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ سڑک کے جس حصے پر ڈرین تعمیر کی گئی اور جہاں ڈرین کی تعمیر کے دوران کھدائی کی گئی تھی ،کی مرمت نہیں کی گئی اور نہ ہی اس پر میکڈم بچھایا گیا ہے۔ رنگر سٹاپ سعدہ کدل کے فاروق احمدنامی شہری نے بتایا کہمیکڈم بچھانے کے بعد اب کئی سال تک سڑک کی مرمت نہیں ہوگی اور اس طرح لوگوں کو پھر سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا ۔ مقامی لوگوں نے ریاستی انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ اس سڑک کی مکمل مرمت کی جائے اور پوری سڑک پرمیکڈم بچھایا جائے تاکہ گذشتہ کئی برسوں سے لوگوں کو درپیش مشکلات سے نجات مل سکے۔
 

تازہ ترین