تازہ ترین

وادی میں زلزلہ کے جھٹکے سے دہشت،شدت 3.6ریکارڈ

تاریخ    23 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


 سرینگر/بلال فرقانی/ منگل کی شام سرینگر سمیت مضافاتی اضلاع میں اس وقت لوگ گھروں سے باہر آئے اور خوف و ہراس میں مبتلا ہوئے جب لوگوں نے دھماکہ جیسی  آواز سنی۔ رات دیر گئے تک کوئی یہ اندازہ نہیں لگا سکا کہ یہ کوئی زیر زمین دھماکہ تھا یا زلزلہ آیا۔9بجکر40منٹ پر سرینگرمیں لوگوں نے  ایک زار دارجھٹکا محسوس کیا جس سے در و دیوار ہل گئے اور لوگ خوف و ہراس میں مبتلا ہوکر گھروں سے باہر آئے،اور کلمہ کا ورد کرتے ہوئے کھلے صحنوں اور سڑکوں و چوراہوں میں جمع ہوئے۔ابتدائی طور پر لوگوں کو محسوس ہوا کہ شائد یہ زلزلہ نہیں بلکہ زوردار دھماکہ تھا کیونکہ زلزلہ کی طرح زمین نہیں ہلی بلکہ آواز بھی آئی۔ لیکن دیر رات گئے بھارت کی ارضیاتی سائنس کی وزارت کی ویب سائٹ پر اس حوالے سے کہا گیا کہ سرینگر کشمیر میں 3.6شدت کا زلزلہ آیا ، جس کی گہرائی زیر زمین 5کلو میٹر تھی۔اس میں کہا گیا ہے کہ اس کا مرکز کشمیر کا شمال مشرقی حصہ تھا۔جو پاکستان اور چین کیساتھ بھی  ملتا ہے۔محکمہ موسمیات کے سربراہ سونم لوٹس نے اس بات کی تصدیق کی کہ یہ کم شدت والا زلزلہ تھا جس کی گہرائی زیر زمین زیادہ نہیں تھی اسی لئے اسے کم شدت کیساتھ محسوس کیا گیا۔