تازہ ترین

بھارت اور چینی فوج میں بعض نکات پر اتفاق

مزید فوج سرحدوں پر نہ بھیجنے اور امن قائم کرنے پر رضامندی

تاریخ    23 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
نئی دہلی // بھارت اور چین نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ حقیقی کنٹرول لائن پر مزید فوجیوں کو نہیں بھیجا جائیگا نیز سرحدی علاقوں میں پر امن حالات بحال کرنے کی خاطر اقدامات کئے جائیں گے تاکہ ٹکرائو کی کوئی صورتحال پیش نہ آئے۔ طرفین نے فوجی کمانڈروں کی سطح پر ساتوں میٹنگ بھی کرنے پر رضا مندی ظاہر کردی ہے۔دونوں ملکوں کے درمیان پیر کو فوجی سطح پر قریب 13گھنٹے تک بات چیت ہوئی تھی جس میں فوجیوں کی واپسی پر کوئی اتفاق نہیں پایا گیا۔ البتہ منگل کو دونوں ملکوں کی جانب سے مشترکہ بیان جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ  بھارت اور چینی فوج مشرقی لداخ میں کشیدگی کم کرنے پر راضی ہوگئی ہے اور انہوں نے یہ فیصلہ بھی کیا ہے کہ سرحدی لاقوں میں اگلی چوکیوں پر مزید فوجیوں کو نہیں بھیجا جائیگا، طرفین یکطرفہ طور پر زمینی صورتحال تبدیل کرنے سے گریز کریں گے اور ایسے اقدام کرنے سے اجتناب کریں گے جن سے ماحول مزید پیچیدہ ہوجائیگا۔دونوں ملکوں کی فوج نے یہ بھی فیصلہ کیا ہے کہ وہ  زمینی سطح پرآپسی رابطوں کو مزید کریں گے اور غلط فہمیوں سے دور رہ کر قبل از وقت غلط تاثر سے بھی پرہیز کریں گے۔اسکے علاوہ دونوں ملکوں کے لیڈروں کے درمیان جن باتوں پر سمجھوتہ ہوا تھا ان اہم معاملات کا اطلاق کریں گے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ طرفین کی میٹنگ کے دوران حقیقی کنٹرول لائن پر استحکام پیدا کرنے کی کوشش کی جائیگی۔بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ملکوں کی فوج بنیادی اقدامات کر کے اپنے  زمینی  تنازعات کو حل کریں گے اور دونوں ملک سرحد پر امن کے قیام کو یقینی بنائیں گے۔بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بہت جلد کمانڈروں کی ساتویں میٹنگ کی جائیگی۔