تازہ ترین

اسکولوں میں تدریسی کام رضاکارانہ طور پر | تعلیمی اداروں میں باضابطہ طور پر کلاسز شروع نہیں ہونگے: کمشنر تعلیم

تاریخ    21 ستمبر 2020 (30 : 12 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//محکمہ تعلیم نے کہا ہے کہ21ستمبر سے کسی بھی تعلیمی ادارے میں معمول کا کام کاج شروع نہیں ہوگا بلکہ زیر تعلیم بچوں کو10ویں جماعت تک رضاکارانہ طور پر مشورے دیں جائیں گے۔ کمشنر سیکریٹری محکمہ تعلیم ڈاکٹر اصغر سامون نے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر ٹیوٹ کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے لاک ڈائون 4کے قواعد ضوابط اور مرکزی وزارت صحت و سماجی بہبود کے پر وٹوکال کے پیش نظر10ویں جماعت تک کے طلاب کو رضاکارانہ طور پر تعلیمی مشورے آج سے دیں جائے گے اور اس مقصد کے خاطر اسکولوں میں روسٹر کی بنیاد پر50فیصد اساتذہ کو دستایب رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کی توثیق پہلے ہی والدین نے کی ہے اور اسی کے پیش نظر یہ فیصلہ لیا گیا ہے کہ اسکولوں میں باضابطہ طور پر تدریسی کام کاج شروع نہیں کیا جائے گا بلکہ جو بچے اسکول آنا چاہے گے انہیں دستایب اساتذہ اپنے مشوروں سے اگاہ کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے جاری قواعد و ضوابط کے حوالے سے پہلے ہی چیف سیکریٹری نے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں،ڈائریکٹروں اور چیف ایجوکیشن افسراں کو مطلع کر رکھا ہے۔