وزیراعظم نے چین کے معاملے پر ملک کو گمراہ کیا: راہل

تاریخ    16 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
نئی دہلی//کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ وزیر دفاع راجناتھ سنگھ کے چین کے بارے میں آج دیئے گئے بیان واضح ہوگیا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے چینی فوجیوں کی دراندازی کے معاملے پر ملک کو گمراہ کیا ہے۔مسٹر گاندھی نے ٹویٹ کیا ’’وزیر دفاع راجناتھ سنگھ کے بیان سے یہ واضح ہے کہ مسٹر مودی نے چینی تجاوزات پر ملک کو گمراہ کیا ہے۔ پورا ملک ہمیشہ ہی ہندوستانی فوج کے ساتھ کھڑا ہے اور رہے گا، لیکن مسٹر مودی آپ چین کے خلاف کب کھڑے ہوں گے؟ چین سے مارے ملک کی زمین کب واپس لیں گے۔ چین کا نام لینے سے ڈرو نہیں‘‘۔لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ادھیر رنجن چودھری نے اس کے بعد سوال کیا کہ جب مسٹر راجناتھ سنگھ کوچین کے معاملے پر پارلیمنٹ میں بیان دینا تھا تو وزیر اعظم نریندر مودی کو اس اہم وقت ایوان میں ہونا چاہئے تھا لیکن وہ ایوان میں نہیں آئے۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر مودی نے اس معاملے پر ملک کو گمراہ کیا ہے اور کہا ہے کہ ہندوستان کی سرحد میں نہ تو کوئی داخل ہوا ہے اور نہ ہی چینی فوج نے ہماری زمین پر قبضہ کیا ہے۔ بعد میں یہ بات واضح ہوگئی کہ چینی فوجی ہندوستانی حدود میں داخل ہوگئے تھے اور مسٹر مودی کے بیان پر حکومت کو وضاحت کرنی پڑی۔انہوں نے کہا کہ اسی طرح سے وادی گلوان میں بھی ملک کے 20 بہادر فوجی شہید ہوئے لیکن حکومت کے پاس اس بارے میں کوئی جواب نہیں ہے، لہذا وہ اس پر پارلیمنٹ میں بحث کرانے سے ڈر رہی ہے۔ پارٹی کے رکن پارلیمنٹ گورو گوگوئی نے کہا کہ کانگریس ملک میں اتحاد کا پیغام دینا چاہتی ہے اور گمراہ کن بیانات کو مسترد کرتی ہے، یہی وجہ ہے کہ لوک سبھا میں وزیر دفاع کے بیان کے دوران پارٹی واک آؤٹ کرگئی۔یو این آئی۔
 

تازہ ترین