تازہ ترین

پینے کے پانی کی قلت

کشتواڑمیںخواتین کا احتجاج،انتظامیہ سے مداخلت کی اپیل

تاریخ    13 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


عاصف بٹ
کشتواڑ//قصبہ کشتواڑ کے وارڈنمبر 4و دھوبی محلہ میں پانی کی عدم دستیابی سے عوام کوسخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مقامی مردو زن نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ انہیں پچھلے دس روز سے پانی کی شدید قلت ہے جسے وہ پانی کی بوند کو ترس رہے ہیں۔خواتین نے میڈیا کو بتایا کہ ہ پانی خرید کر لاتے ہیں جبکہ محکمہ جل شکتی ان سے مفت میں فیس وصول کررہاہے اور وہ ٹینکر منگوانے پر مجبور ہیں۔ان کاکہناتھاکہ تعمیری کام کے دوران پانی کی پایپیں ٹوٹ گء ہیں اور گندہ پانی انکے ٹینکوں میں چلاجاتاہے اور وہ اسے ہی پی رہے ہیں جس میں مٹی اور دیگر گندگی مل جاتی ہے ان کاکہناتھاکہ اگرچہ محکمہ کے ملازمین کو بتایاجاتا ہے لیکن وہ بہانے بازی کرتے ہیں اور سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیاجارہا۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں اس وقت وبائی بیماری پھیلی ہوئی ہے اور انتظامیہ ہر ممکنہ سہولت کی فراہمی کی باتیں کررہی ہے لیکن زمینی سطح پر سبھی دعوے کھوکھلے ہیں۔ ان کاکہناتھاکہ انہیں ڈر ہے کہ وہ وبائی بیماری سے نہیں بلکہ گندہ پانی پینے سے ہی بیمار ہوجائیں گے۔ مقامی لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوے کہا کہ انتظامیہ کی طرف سے گندہ پانی فراہم کرکے انکے و انکے بچوں کی زندگیوں کے ساتھ کھلواڑ کیا جارہا ہے اور انکی جانوں کو خطرہ لاحق ہے۔ان کاکہناتھاکہ محکمہ کے ملازمین کو ٹس سے مس نہیں ہورہالہٰذا حکام فوری طور پر اقداما ت کرکے انہیں اس پریشانی سے نجات دلائیں۔محکمہ کے ایک افسر نے بتایا کہ مقامی لوگ تعمیری کام کررہے ہیں اور جے سی بی سے پائپوں کو نقصان پہنچا ہے جسکی جلد مرمت کرکے صاف پانی فراہم کیاجائے گا۔