بیک ٹو ولیج کا تیسرا مرحلہ | ہرپنچایت کیلئے 10 لاکھ روپے کی منظوری

تاریخ    9 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


سید امجد شاہ
جموں//محکمہ عمومی انتظامی نے جموں وکشمیر میں تیسرے مرحلے کے تحت بیک ٹو ولیج کے کاموں پر عمل درا?مد کے لئے ہر پنچایت کو 10 لاکھ روپے کی گرانٹ کی منظوری دی۔جی ڈی اے کی جانب سے 2 اکتوبر سے 12 اکتوبر 2020 ء  تک شروع ہونے والے مجوزہ بیک ٹو ولیج پروگرام کے پیش نظر جاری کردہ حکم میں لکھا گیا ہے ’’ان پنچایتوں میں کھیلوں کی کٹوں کی خریداری کے لئے خاص طور پر 2000 روپے رکھے جائیں گے‘‘۔جی اے ڈی نے تمام ضلع افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنی پوسٹنگ کی جگہ پر موجود رہیں تاکہ متعلقہ اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو لوگوں کی شکایات کو دور کرنے کے لئے مدد مل سکے۔محکمہ کے جاری کردہ حکم میں کہا گیا ہے ’’بیک ٹوولیج تیسرے مرحلے کے پروگرام کے دوران میڈیکل ایمرجنسی کے بغیر کسی بھی طرح کی چھٹی کی منظوری نہیں دی جائے گی‘‘۔اس کے علاوہ تمام انتظامی سکریٹریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ بیک ٹو ولیج تیسرے مرحلے کے دوران اپنے مختص شدہ اضلاع کا دورہ کریں۔ اس پروگرام کی کامیابی کو یقینی بنانے کے لئے انتظامی سکریٹریوں اور محکموں کے سربراہوں کو بھی ہدایت کی گئی ہے کہ وہ مہم کے دوران اپنے ماتحت افسران کو طلب نہ کریں۔حکم نامہ کے مطابق ’’ڈپٹی کمشنرز اور محکموں کے سربراہان اور دیگر افسران مہم کے دوران بڑے پیمانے پر فیلڈ ٹور کروائیں تاکہ موصول ہونے والی تمام شکایات کے ازالے کو یقینی بنایا جاسکے‘‘۔جی ڈی اے کے مطابق ان شکایات کو 19 ستمبر 2020 کو شروع کئے جانے والے نئے عوامی شکایات کے نظام میں بھی شامل کیا جائے گا۔حکمنامہ میں مزید کہاگیاہے ’’ضلع انتظامیہ کو ہر خدمت ، اسکیموں اور مختلف سرٹیفکیٹ جیسے ڈومیسائل ، ایس سی ، ایس ٹی ، آر بی اے ، اے ایل سی ، او بی سی ، پنشن ، وظائف ، آدھار کارڈز ، کے سی سی ، گولڈ ن کارڈز ، جے کے ہیلتھ اسکیم کارڈز کی نشاندہی کرنا چاہئیاورنریگا ، ایم وی ڈی خدمات جیسے ڈرائیونگ لائسنس کے تحت اندراج کوشامل کیا جائے گا ‘‘۔
 

تازہ ترین