تازہ ترین

بہتر ماحول کیلئے مشاورت کا آغاز کیا جائیگا: منوج سنہا

۔70برسوں میں کیا حاصل ہوا، آیئے محاسبہ کریں

تاریخ    13 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


بلال فرقانی

پنچایتی اراکین اور سیاسی کارکنوں کی حفاظت یقینی بنانے کی کوشش ہوگی

 
سرینگر// جموں کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا ہے کہ وہ لوگوں کیساتھ مشاورت کا آغاز کررہے ہیں تاکہ بہتر ماحول پیدا کیا جاسکے۔ایس کے آئی سی سی میں کافی ٹیبل کُتب کے اجرأ کی تقریب کے دوران انہوں نے کہا ہے کہ ان کی سربراہی میں انتظامیہ ان تمام منتخب سرپنچوں اور پنچوں کے علاوہ دیگر سیاسی کارکنوں کیلئے بھی سیکورٹی کے بہتر انتظامات کو یقینی بنائے گی، جنھیں خطرات کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا’’ہم لوگوں کیساتھ مشاورت کا آغاز کریں گے، تاکہ ایک بہتر ماحول پیدا کیا جاسکے‘‘۔انکا کہنا تھا’’ اس بات کو یقینی بنایا جائیگا کہ لوگ امن اور وقار کی زندگی گزار سکے۔ منوج سنہا نے کہا’’ہم جموں و کشمیر کی ترقی کو کسی بھی امتیاز کے بغیر یقینی بنائیں گے۔سنہا نے کہا’’جب ہم تبدیلی کی بات کرتے ہیں تو ہمیں پہلے اپنے آپ کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے ،جموں و کشمیر میں جمہوریت پھل پھولے گی اورہم سب کو اس کیلئے کام کرنا ہوگا‘‘۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ ماہ اگست بھارت کی تاریخ میں کافی اہمیت کا حامل ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ ہمیں احتساب کرنا ہو گا کہ گذشتہ 70 برسوں کے دوران جموں کشمیر کو کیا حاصل ہوا ۔ اُنہوں نے کہا کہ جموں کشمیر میں ایک نئی شروعات کی گئی ہے اور یو ٹی حکومت تعمیر و ترقی کا ایجنڈا آگے بڑھانے کیلئے کوشاں ہے اور جموں کشمیر کی ترقی اور اس کے عوام کی بہبود مرکزی اور یو ٹی حکومت کی ترجیحی اوّل ہے ۔انہوں نے کہا’’کچھ سیاسی کارکنوں اور پنچایت کے نمائندوں کو حال ہی میں ہلاک کیا گیا ہے ، میں نے ان کے اہل خانہ سے دلی تعزیت کا اظہار کیا اور میری انتظامیہ ان کے اہل خانہ کے ساتھ کھڑی ہے‘‘۔ سنہا نے بتایا کہ پنچایتی نمائندوں اور سیاسی کارکنوں کے تحفظ کے لئے کچھ اقدامات پہلے ہی کئے جا چکے ہیں لیکن’’ ہم ان کے لئے آنے والے دنوں میں سیکورٹی کے بہتر انتظامات کو یقینی بنائیں گے۔‘‘اس موقع پر کوڈ سے صف اول پر نبرد آزما لوگوں ، پنچایت او ربلدیہ کے نمائندوں کی سراہنا کی گئی جبکہ جاری ترقیاتی کاموں پر ایک مختصر فلم بھی چلائی گئی۔سنہا نے سیاسی کارکنوں اور پنچایت نمائندوں کی حفاظت کے بہتر انتظامات کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا ’’انتظامیہ کوپنچایتی نمائندوں اور دیگر سیاسی کارکنوں کے لئے مستقبل میں سیکورٹی حکمت عملی مرتب کرنے  کے دوران محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔‘‘ سنہا نے کہا ’’وزیر اعظم نے مجھے بتایا  ہے کہ مجھے(منوج سنہا) کو جموں و کشمیر کی تیز رفتار ترقی کے لئے کام کرنا چاہئے،یہاںترقی ہوئی ہے لیکن مجھے لگتا ہے کہ زمینی سطح پر اس عمل کو تیز کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کا پنچایتی راج ایکٹ بھارت کے دیگر ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام والے خطوںسے زیادہ مضبوط ہے۔