تازہ ترین

مزید خبرں

تاریخ    12 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک

اِنتظامیہ کو لوگوں کی دہلیز تک لانا موجودہ حکومت کا مقصد : بصیر خان

سرینگر//عوامی شکایات کے وفود کو سنتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے کہا کہ عوامی شکایات کا ازالہ بہتر اِنتظامیہ کی روح ہے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ اِنتظامیہ کو لوگوں کی دہلیز تک لانا موجودہ حکومت کا مقصد ہے۔اِس موقعہ پر کئی وفود اور اَفراد مشیر سے ملے اور ان کی شکایات کا فوری ازالہ طلب کیا۔ان میں فروٹ گروئورس ایسو سی ایشن کا وفد بھی شامل ہے جنہوں نے این اے ایف ای ڈی کے تحت اس سال بھی مارکیٹنگ اِنٹرونشن سکیم جاری رکھنے کی مانگ کی ۔اُنہوں نے گذشتہ سال بے وقت برف باری سے متاثرہ باغ مالکان کے حق میںکے سی سی قرضہ جات کو معاف کرنے کی مانگ کی۔چرار ِشریف کے علمدار ٹریڈرریس ایسو سی ایشن نے جامع مسجد کی تعمیر کی فوری تکمیل، زیارت گاہوں اور اس کے گردو نواح کی دیدۂ ذیبی ، شاپنگ کمپلیکس کی تکمیل ، نئی ہسپتال عمار ت چالو کرنے ، مقامی ہائیر سکینڈری سکول کے لئے نئی عمارت کی تعمیر ، گرڈ سٹیشن کی تکمیل اور ان کے علاقے میں انڈسٹریل ایسٹیٹ قائم کرنے کی مانگ کی۔محکمہ دیہی ترقی میں کام کر رہے سی آئی سی اوپریٹرس کے ایک وفد نے محکمہ میں اُن کی ملازمت باقاعدہ بنانے کی مانگ کی ۔سرینگر ، اتھواجن کے پتھر کان کنی کرنے کے ایک وفد نے ان کی تجارت سے متعلق متعدد مانگیں مشیرموصوف  پیش کیں۔اس کے علاوہ درجنوں افراد بھی ان سے ملے اور اپنی شکایات کا ازالہ طلب کیا۔ایک روزہ طویل اس عوام تک پہنچنے کے پروگرام کے دوران مشیر موصوف نے وفود او رافراد کے مطالبات و شکایات بغور سنیں او رمتعلقہ حکام کو تمام مسائل کا ازالہ بغیر کسی تاخیر کے کرنے کی ہدایت دی۔واضح رہے کہ کووِڈ۔ 19وبا کے پیش نظر وفود او راَفراد کو مشیر سے مختلف اوقات کے دوران ملاقات کی تاکہ سماجی دور بنائے رکھنے اور دیگر کووِڈ۔19پروٹوکالز پر عمل درآمد یقینی بنایا جاسکے۔
 
 
 

جنم اشٹمی پر لفٹینٹ گورنر سنہا ،مشیروں اورڈاکٹر فاروق کی مبارکباد 

 
سرینگر//لفٹینٹ گورنر منوج سنہا ،لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر، کے کے شرما، فاروق خان اور بصیر احمد خان نیجموں کشمیر کے عوام کو شری کرشنا جنم اشٹمی کے مبارک موقعہ پر مبارکباد پیش کی ۔ اپنے مبارکبادی پیغام میںلفٹینٹ گورنر نے کہا کہ شری کرشنا سچائی اور انصاف کے علمبردار تھے اور یہ تہوار شریمد بھگوت گیتا میں درج شری کرشنا کی حیات و تعلیمات کو اجاگر کرتا ہے جو ہمیں بے لوث خدمت اور سچائی کا درس دیتا ہے جو ایک ہم آہنگ معاشرے کی تعمیر کیلئے لازمی ہے ۔ لفٹینٹ گورنر نے امید ظاہر کی کہ یہ مقدس موقعہ جموں کشمیر میں سماجی یگانگت اور بھائی  چارے ،امن و آشتی  کو مزید مستحکم بنائے گا انہوں نے لوگوں کو یہ تہوار انتظاییہ کی جانب سے جاری کئے گئے ایس او پیز اور رہنما خطوط پر عمل پیرا  رہ کر منانے کوکہا ۔انہوں نے یو ٹی کیلئے امن و خوشحالی کی دعا کرتے ہوئے جموں کشمیرکے عوام کیلئے نیک تمناؤں  اور خیر و عافیت کی دعا کی ۔ ادھرلیفٹنٹ گورنر کے مشیروں راجیو رائے بھٹناگر، کے کے شرما، فاروق خان اور بصیر احمد خان نے بھی مبارک باد پیش کرتے ہوئے الگ الگ پیغامات میںکہا کہ جنم اشٹمی کو منانے کا مقصد آپسی رواداری ، میل ملاپ او ربھائی چارہ قائم کرنا ہے۔اُنہوں نے کہاکہ اِن آدرشوں کی بدولت ہمارے ملک کا اِتحاد اور سا  لمیت اَب تک قائم و دائم ہے۔مشیروں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اِس تہوار کو مناتے ہوئے کووِڈ۔ 19 کی عالمی وبائی بیماری کے پیش نظر رہنما خطوط پر سختی سے عمل پیرا رہنے اور سماجی دُور ی کو بنائے رکھیں۔ مشیر وں نے جموں و کشمیر کے لوگوں کے لئے امن ، ترقی اور خوشحا لی کے لئے دعا کی۔ادھر نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے جنم اشٹمی پر ہندو برادری کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ مذہبی تہوار ہمیں آپس میں بھائی چارہ، اخوت، فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور خصوصاً انسانیت کا درس دیتے ہیں۔انہوں نے کہا ’’ ہماری ریاست صدیوں سے آپسی بھائی چارہ اور امن وامان کا گہوارہ رہی ہے‘‘۔ڈاکٹر فاروق نے دعا کی کہ اللہ ہمیں انسانیت کے عظیم اصولوں پر قائم رکھے اور ریاست میں امن وامان بحال ہوجائے۔ صوبائی صدر جموں دویندر سنگھ رانا ،ایڈوکیٹ رتن لال گپتا اور بھوشن لال بھٹ نے بھی لوگوں کو مبارکباد دی۔
 
 
 

 ویسو پنڈت کیمپ میں جنم اشٹمی کی تقریب منعقد

 
اننت ناگ/عارف بلوچ//ویسو قاضی گنڈ کے پندت کیمپ میں جنم اشٹمی کی تقریب کرونا وائرس کے پیش نظر سادگی کے ساتھ منائی گئی ۔ ٹرانزٹ کیمپ میں رہائش پذیر کشمیری پنڈتوں نے روایتی جوش وخروش کے برعکس جنم اشٹمی کو مذہبی عقیدت کے ساتھ منایا ،خوبصورتی سے سجائے گئے رتھ میں بھگوان کرشن کی جھانکی نکالی گئی ۔کرونا وائرس کے پیش نظر گھروں میں ہی رات بھر خصوصی پوجا پاٹ کیا گیااور عالمی وباء کے خاتمے کے لئے خصوصی دعا کی گئی ۔اس موقعہ پر مقامی مسلمانوں نے پنڈت برادری کو مبارکباد پیش کی ۔ویسو ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر سنی رینا نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہر سال کالونی میں یہ تہوار بڑھے دھوم دھام سے منایا جاتا تھا تاہم امسال کرونا وائرس کے سبب تہوار نہایت سادگی کے ساتھ منایا گیا ۔اُنہوں نے مقامی مسلمانوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔
 
 
 

شاعرِ کشمیر مہجور کا133 واں یومِ ولادت | کلچرل اکیڈیمی کے اہتمام سے آن لائن پروگرام کا انعقاد

سرینگر//جموں کشمیر کلچرل اکیڈیمی کی طرف سے شاعرِ کشمیر پیرزادہ غلام احمد مہجور کے 133 ویں یومِ ولادت کے سلسلے میں ایک آن لائن ادبی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ تقریب کی صدارت سرکردہ شاعر، ادیب اور صحافی غلام نبی خیال نے کی جبکہ پروفیسر بشر بشیر، پروفیسر مشعل سلطانپوری،پروفیسر مجروح رشید، ڈاکٹر آفاق عزیز، رفیق راز، پیرزاہ ابدال مہجور،ستیش وِمل اور برج ناتھ بیتاب نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے مہجور کی ثقافت شناسی اور کشمیری زبان و ادب کو فروغ دینے کے لئے اُن کی کوششوں کو سراہا۔ اس سے قبل وادی کے معروف گلوکار منیر احمدمیر اور کیلاش مہرہ نے کلامِ مہجور سے سامعین کو محظوظ کیا۔ محمد اشرف ٹاک نے استقبالیہ تقریر میں کہا کہ اکیڈیمی کے لئے مہجور کے یومِ ولادت کے سلسلے میں تقریبات کا انعقاد گذشتہ نصف صدی سے ہوتا آیا ہے لیکن کورونا کے پیش نظر ایسا ممکن نہیں ہوپایا۔ تقریب میں مہجور سے جُڑے بعض نوادِرات جیسے اُن کی نادر تصاویر، اُنکی یاد میں جاری ڈاک ٹکٹ، مہجور کی رہائش گاہ اور 1951 میں ریڈیو کشمیر میں صدابند ملاقات کو آن لائن کیا گیا۔ غلام نبی خیال نے صدارتی تقریر میں تقریب کے انعقاد پر اکیڈیمی کو مبارکباد پیش کی اور مہجور کے کلام اور اُن کے پیغام کو مزید عام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔سی این آئی
 
 
 

سرکردہ ادیب ہردے کول بھارتی کو خراج عقیدت

 
سرینگر//عبدالرحمان آزاد میموریل فائونڈیشن کی طرف سے ہردے کول بھارتی کے انتقال پر ایک آن لائن تعزیتی اجلاس فائونڈیشن کے سرپرست شکیل آزاد کی صدارت میں منعقد ہوا۔اجلاس کے دوران ممبران نے بھارتی کی زندگی اور فن کے مختلف گوشوں پر روشنی ڈالتے ہوئے ہردے کول بھارتی کو ایک نڈر قلمکار قرار دیا ۔انہوں نے کہا کہ آنجہانی ایک پختہ افسانہ نگار ہونے کے ساتھ ساتھ ایک کہنہ مشق ڈرامہ نگار بھی تھے۔
 
 
 
 
 
 

بانڈی پورہ ہسپتال کی زیر تعمیر عمارت آخری مراحل میں:ڈپٹی کمشنر

بانڈی پورہ/عازم جان //ضلع ترقیاتی کمشنر بانڈی پورہ ڈاکٹر اویس احمد نے کہا کہ ضلع ہسپتال کا کام آخری مرحلہ میں ہے اور دوماہ کے اندر اندر ہسپتال نئی عمارت منتقل ہوگا۔ ڈپٹی کمشنر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے یقین دہانی کی کہ تعمیری کام آخری مرحلے میں ہے ۔انہوں نے کہا کہ اب ضلع کے لوگوں کو علاج ومعالجہ کیلئے کوئی پریشانی نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ زیر تعمیر ضلع ہسپتال کا دورہ کرنے کے دوران تعمیراتی ایجنسی پر زور دیا کہ تعمیری کام میں سرعت لائیں اور اب مزید کوئی تساہل برداشت نہیں کیا جائے گا۔ڈاکٹر اویس نے کہا ’’ضلع ہسپتال اور بانڈی پورہ سرینگر سڑک میری اولین ترجیحات میں شامل ہے ‘‘۔
 
 
 
 
 
 

 شوپیان میں پانی کے بحران پر اپنی پارٹی کی تشویش

سرینگر//جموں وکشمیر اپنی پارٹی لیڈرظفر اقبال منہاس نے ضلع شوپیان میں پینے کے صاف پانی کی قلت پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ایک بیان میں منہاس نے کہاکہ ضلع شوپیاں کے لوگ خاص طور پر کرالپورہ ، گیٹی پورہ ، نصر پورہ ، ڈو نڈو ، پہلی پورہ ، بوری ہلان ، چیک سید پورہ ، امشی پورہ اور دچھنا علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی قلت سے لوگ سخت پریشان ہیں۔انہوںنے کرالپورہ واشرو پانی سپلائی کو شروع کرنے میں کی جارہی غیر ضروری تاخیر پر حیرانگی کا اظہار کیا ہے جوکہ بہت عرصہ پہلے مکمل ہوچکی ہے۔ ظفرمنہاس نے کہا ’’ شوپیان خاصکر کنڈی علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی قلت سے متاثر لوگوں کو مجبوراًاحتجاجی راستہ اختیار کرنا پڑتاہے، میں حیران ہوں کہ علاقہ میں پانی کے بحران کے باوجود محکمہ کی طرف سے مکمل کی گئی واٹر سپلائی اسکیم کو چالو نہیں کیاجارہاہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ لوگ آلودہ پانی استعمال کرنے پر مجبور ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جل شکتی محکمہ نے لوگوں کے مشکلات کے تئیں آنکھیں بند کر لی ہیں لہٰذا انتظامیہ کو چاہئے کہ لوگوں کو بلاخلل پینے کا صاف پانی مہیا کروایاجائے۔ انہوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر شوپیان سے اپیل کی کہ وہ اِس معاملہ میں مداخلت کر کے کرالپورہ واشروپانی سپلائی اسکیم کو فعال بنائیں تاکہ لوگوں کو مزید مشکلات سے نہ گزرنا پڑے ۔
 
 

ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی کی جانب سے شجر کاری مہم کا آغاز

گاندربل/ارشاد احمد//سندھ فارسٹ ڈویڑن گاندربل کے تعاون سے ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی گاندربل کی جانب سے ایک ہفتہ شجر کاری مہم کا آغاز کیا گیا۔شجر کاری مہم کے آغاز پر قمریہ پارک گاندربل کے احاطے میں ڈسٹرکٹ لیگل سروس اتھارٹی کے چیئرمین محمد یوسف وانی ،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج،چیف جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق احمد بٹ اور سیکریٹری ڈسٹرکٹ لیگل سروس اتھارٹی سجاد الرحمن نے پودے لگائے۔ پودا لگاتے ہوئے چیئرمین نے ماحولیاتی توازن برقرار رکھنے اور خشک موسموں کے خطرات سے بچنے میں پودوں کے فوائد پر روشنی ڈالی۔خوبصورتی اور ماحول دوست کو برقرار رکھنے میں پودوں کو لگانے پر روشنی ڈالی۔اس موقع پر جنگلات کے تحفظ اور درختوں کے تحفظ کے لئے شہریوں کے قانونی اور اخلاقی فرض کو اجاگر کیا گیا۔  یہ مہم 14 اگست 2020 تک جاری رہے گی۔