تازہ ترین

ٹرمپ کی پریس بریفنگ کے دوران وائٹ ہائوس کے قریب فائرنگ

تاریخ    12 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
سرینگر //امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو سیکرٹ سروس کے اہلکاروں نے پیر کو میڈیا بریفنگ کے دوران اچانک اس وقت محفوظ مقام پر منتقل کیا جب وائٹ ہائوس کی عمارت کے قریب فائرنگ کا واقعہ پیش آیا۔صدر ٹرمپ چند منٹ بعد بریفنگ کیلئے واپس آئے اور صحافیوں سے مخاطب ہو کر کہا کہ باہر فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے اور کسی شخص کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایسا لگتا ہے کہ صورتِ حال مکمل طور پر کنٹرول میں ہے۔بریفنگ روم میں واپس آنے پر صدر ٹرمپ نے صحافیوں کو بتایا کہ اْنہیں اوول آفس لے جایا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جیسے آپ حیرت کا شکار ہوئے، اسی طرح مجھے بھی حیرت ہوئی۔صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ وہ سیکرٹ سروس کے مشکور ہیں۔ یہ بہترین لوگ ہیں۔امریکی صدر کے صحافیوں سے استفسار پر نشریاتی ادارے ’فاکس نیوز‘کے وائٹ ہاؤس کے نمائندے جان رابرٹس کا کہنا تھا کہ انہوں نے صدر ٹرمپ کے جاتے ہی دو فائر ہونے کی آواز سنی۔ڈسٹرکٹ کولمبیا کے فائر اینڈ ایمرجنسی میڈیکل سروسز ڈپارٹمنٹ کے مطابق اس کے مختلف یونٹس نے ایک زخمی شخص کو طبّی امداد دینے کے لیے کارروائی کی۔ اس شخص کو جسم کے اوپری حصے میں گولی لگی تھی۔دوسری جانب سیکرٹ سروس یونی فارم ڈویڑن کے سربراہ ٹام سولوین نے کہا ہے کہ گولی سے زخمی ہونے والے شخص کی عمر51 سال ہے۔ اس نے سیکرٹ سروس کے ایک اہلکار کے قریب پہنچ کر بتایا تھا کہ اس کے پاس اسلحہ ہے۔اْن کے بقول مشکوک شخص نے مڑ کر جارحانہ انداز میں سیکرٹ سروس کے اہلکار کی جانب بڑھنا شروع کیا اور پھر رفتار بڑھا دی۔ اسی دوران اس شخص نے اپنے لباس سے کوئی چیز بھی گرائی۔