نیوزی لینڈ کو اس سال چار ممالک کی میزبانی کا یقین

تاریخ    12 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
آکلینڈ //کورونا کے سبب زیادہ تر کرکٹ سرگرمیاں موقوف ہونے کے باوجود نیوزی لینڈ کی کرکٹ رواں سال کے آخر تک ویسٹ انڈیز ، پاکستان ، آسٹریلیا اور بنگلہ دیش کے ساتھ سیریز کی میزبانی کے لئے پراعتماد ہے ۔نیوزی لینڈ کرکٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ڈیوڈ وائٹ نے منگل کے روز کہا کہ پاکستان ، آسٹریلیا ، بنگلہ دیش اور ویسٹ انڈیز نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ آنے والے موسم گرما میں ان کے ملک کا دورہ کریں گے ۔ وائٹ نے کہا کہ نیوزی لینڈ کرکٹ (این زیڈ سی) ایک بایو سیکیور ماحول بنانے میں مصروف ہے ، جیسا کہ انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) نے موجودہ سیزن میں کورونا وائرس سے متاثرہ بین الاقوامی کرکٹ کو دوبارہ شروع کرنے کے لئے کیا ہے ۔انہوں نے ای ایس پی این کرک انفو کو بتایا کہ ہم اچھی پیشقدمی کر رہے ہیں۔ میں نے ابھی فون پر ویسٹ انڈیز سے بات کی ہے اور وہ یہاں آنے کی تصدیق کر رہے ہیں جبکہ پاکستان نے تصدیق کردی ہے ، آسٹریلیائی اور بنگلہ دیش نے بھی اس دورے پر اتفاق کیا ہے لہذا ہمارے پاس 37 دن کی انٹرنیشنل کرکٹ ہے ۔ وائٹ نے کہا کہ خواتین کی ٹیم ستمبر میں آسٹریلیا کا دورہ کرے گی جبکہ آسٹریلیائی خواتین کی ٹیم فروری میں نیوزی لینڈ کا دورہ کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ وائٹ فرنز (نیوزی لینڈ خواتین ٹیم) ستمبر میں آسٹریلیا کا دورہ کریں گی اور اس کے بعد آسٹریلیائی خواتین کی ٹیم فروری میں نیوزی لینڈ کا دورہ کرے گی۔ ہم ابھی شیڈول پر کام کر رہے ہیں لیکن یہ توقع ہے کہ یہ پانچ ون ڈے اور تین ٹی ٹوئنٹی میچوں کی سیریز ہوگی۔نیوزی لینڈ میں کسی دوسرے ملک سے آنے والوں کو 14 دن تک قرنطینہ میں رہنا پڑتا ہے ۔ فیوچر ٹور پروگرام (ایف ٹی پی) کے مطابق نیوزی لینڈ کو ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لئے ویسٹ انڈیز اور پاکستان کی میزبانی کرنی ہے ۔ یہ پانچ روزہ میچ ورلڈ ٹیسٹ چمپیئن شپ کا حصہ ہیں۔ بنگلہ دیش ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل سیریز کے لئے نیوزی لینڈ آنا ہے ۔ اس کے بعد آسٹریلیائی ٹیم ٹی 20 سیریز کے لئے یہاں کا دورہ کرے گی۔نیوزی لینڈ میں کوویڈ 19 وبا کی وجہ سے مارچ سے کرکٹ سے وابستہ سرگرمیاں بند ہیں۔ تاہم ، کپتان کین ولیمسن ، فاسٹ بولر ٹرینٹ بولٹ اور راس ٹیلر سمیت ملک کے اعلی کرکٹرز گزشتہ ماہ ٹیم کے تربیتی کیمپ میں واپس آگئے ہیں۔ یو این آئی 
 

تازہ ترین