تازہ ترین

صارفین کو پینے کے پانی کی قلعت درپیش | سوپور میں جل شکتی محکمہ کے خلاف احتجاج

تاریخ    11 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


غلام محمد
سوپور//شمالی قصبہ سوپور میں پینے کے صاف پانی کی قلت پر مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ اور جل شکتی محکمہ کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا۔دھرنا میں خواتین بھی شامل تھیں۔چک روڑے خان سوپور کے احتجاجی لوگوںنے بتایا کہ ان کے علاقے میں گزشتہ 5سالوں سے پینے کے پانی کی قلت پائی جارہی ہے اورلوگگرمیوں کے ان ایام میںسخت مشکلات کا سامنا کررہے ہیں۔ احتجاجی خواتین کا کہنا تھا کہ انہوں نے اس سلسلے میں جل شکتی محکمہ کو کئی بار آگاہ کیا مگر وہ خواب خرگوش میں ہیں۔ حلیمہ بیگم نامی ایک خاتون نے بتایا کہ ان کے علاقے میں ہر سال گرمی کے ایام میں پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگ ندی نالوں کا ناصاف پانی استعمال کرنے پر مجبور ہوتے ہیں ۔ جل شکتی محکمہ سوپور کے ایگزیکٹیو انجینئر غلام رسول کا کہنا ہے کہ گرمیوں اور رواں خشک سالی کے نتیجے میں کئی علاقوں میں پانی کی سپلائی متاثر ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کے پاس پانی سپلائی کرنے کیلئے اتنے ٹینکر موجود نہیں ہیں کہ وہ قصبہ کے کونے کونے تک بیک وقت پانی پہنچائیں۔ انہوں نے لوگوں سے محکمہ کے ساتھ تعاون کرنے کی اپیل کی اور پانی کا ضرورت سے زیادہ استعمال نہ کرنے پر زور دیا۔ انہوں نے احتجاجی خواتین کو یقین دلایا کہ ان کے علاقے میں ٹینکر کے ذریعے پانی فراہم کیا جائے گا۔