تازہ ترین

سجاد لون کم وبیش ایک سال بعد رہا

’جیل کا یہ تجربہ نفسیاتی طور تھکادینے والاتھا‘

تاریخ    1 اگست 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//پیپلزکانفرنس کے چیئرمین سجادغنی لون کو جمعہ کولگ بھگ ایک سال کی نظربندی کے بعد رہا گیا۔ لون کو مرکزی حکومت کی طرف سے گزشتہ برس دفعہ370کی تنسیخ اور ریاست جموں کشمیرکودومرکزی زیرانتظام علاقوں میں تقسیم کئے جانے کی پہلی سالگرہ سے کئی روز قبل رہاکیاگیا۔لون نے ٹوئٹرپر اپنی رہائی کی تصدیق کی ۔ایک ٹوئٹ میں انہوں نے لکھا، ’’آخرکار ایک بر س سے پانچ روزکم مجھے سرکاری طور مطلع کیاگیاکہ میں آزاد ہوں،کتنابدل چکا ہے ، اورمیں بھی۔جیل کوئی نیا تجربہ نہیں تھا۔پہلے کے تجربے سخت تھے،جسمانی اذیتیں دی جاتی تھیں ۔لیکن یہ والانفسیاتی طور تھکادینے والاتھا ۔عنقریب بہت کچھ بتائو گا۔‘‘جموں کشمیر پیپلزکانفرنس کے چیئرمین کو اس سال فروری میں اپنی رہائش گاہ منتقل کیاگیااورخانہ نظربندرکھاگیا۔ انہیں گزشتہ سال5فروری کو حراست میں لیاگیاجب مرکز ریاست جموں کشمیرکاخصوصی درجہ ختم کیااورسابق ریاست کو دومرکزی زیرانتظام علاقوں میں تقسیم کیا۔لون سابق بھاجپا پی ڈی پی حکومت میں کابینہ وزیرتھے اورانہیں سینتورہوٹل کے عارضی جیل میں جھیل ڈل کے کنارے دیگر مین اسٹریم سیاستدانوں کے ہمراہ قید کیاگیااوراس کے بعد انہیں ایم ایل اے ہوسٹل منتقل کیاگیا۔تاہم فروری کے مہینے میں لون اور پی ڈی پی لیڈر وحیدپراکو اپنی رہائش گاہوں پر منتقل کیا گیا اورخانہ نظر بندرکھاگیا۔اس دوران نیشنل کانفرنس کے نائب صدر و سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے سجاد لون کی رہائی پر اظہار مسرت کرتے ہوئے سماجی رابطہ گاہ پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے’’ یہ سن کر خوشی ہوئی کہ سجان لون کو غیر قانونی خانہ نظر بندی سے رہا کیا گیا،امید کرتا ہوں کہ دیگر لیڈروں، جو اسی طرح غیر قانونی طور پر نظر بند ہیں، کو بغیر کسی تاخیر کے رہا کیا جائے گا‘‘۔