سچن کی ڈبل سنچری بنانے میں ناکامی پر کپل دیو حیران

تاریخ    30 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


نئی دہلی/ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان کپل دیو نے سچن تندولکر کو ٹیسٹ میں زیادہ ڈبل سنچری اسکور کرنے میں ناکامی پر سوالات اٹھائے ہیں۔ کپل نے کہا کہ سچن سنچری بنانا جانتے تھے لیکن وہ اسے ڈبل اور ٹرپل سنچری میں تبدیل کرنے کے فن میں زیادہ ماہر نہیں تھے ۔انہوں نے یہ بات موجودہ خواتین کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ ڈبلیو وی رمن کے ساتھ انٹرویو میں کہی۔سچن نے وریندر سہواگ ، جاوید میانداد ، رکی پونٹنگ ، یونس خان اور مرون اٹاپٹو کے برابر ٹیسٹ میں 6 ڈبل سنچریاں اسکور کی ہیں لیکن پھر بھی وہ ٹیسٹ میں سب سے زیادہ سنچریاں بنانے کے معاملے میں 12 ویں نمبر پر ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ انہوں نے 200 ٹیسٹ کھیل کر اتنی ڈبل سنچریاں بنائی ہیں۔ اس فہرست میں آسٹریلیائی بلے باز ڈان بریڈمین 12 ڈبل سنچریوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں۔ کپل نے سابق ہندوستانی کپتان کی بیٹنگ کا یہ پہلو اٹھایا ہے ۔کپل نے کہا کہ سچن میں تیز اور اسپن دونوں بالرز کے ہر ایک اوور میں ایک باؤنڈری لگانے کی صلاحیت ہے ۔ ایسی صورتحال میں انہیں ٹیسٹ میں کم سے کم 5 ٹرپل اور 10 ڈبل سنچریاں بنانی تھیں۔ لیکن وہ ٹیسٹ میں ایک بھی ٹرپل سنچری نہیں بناسکے ۔کپل نے سچن کو ٹیسٹ میں ڈبل سنچریوں کی ایک بہت کم تعداد بنانے میں ان کے ابتدائی کرکٹنگ کیریئر کو ذمہ دار ٹہرایا ۔ کپل نے کہا کہ سچن ممبئی سے ہیں۔ تو ان کی ذہنیت تھی کہ جب آپ سنچری اسکور کرتے ہیں تو آپ دوبارہ شروعات کرتے ہیں۔ لیکن مجھے یہ طریقہ پسند نہیں ہے ۔ آپ ایک عظیم بلے باز ہیں آپ سے گیند بازوں کو ڈرنا چاہئے ۔ لیکن سنچری اسکور کرنے کے بعد وہ تیز کھیلنے کے بجائے سنگلز لیتے تھے ۔سچن نے ٹیسٹ میں سب سے زیادہ 51 سنچریاں اسکور کی ہیں۔