عامر پاکستان کو جتوا سکتا ہے تو کیوں نہ کھلائیں: وقار یونس

تاریخ    23 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


کراچی/ پاکستانی کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ وقار یونس کا کہنا ہے کہ محمد عامر سمیت کوئی کھلاڑی پاکستانی ٹیم کے لئے ناگزیر نہیں ہے اور نہ ہی کسی کھلاڑی پر ہمیشہ کے لئے کرکٹ کے دروازے بند کیے گئے ہیں۔ انگلینڈ میں پاکستان کا ٹریک ریکارڈ کافی اچھا ہے، امید ہے اس بار بھی ٹیم کو مایوس نہیں کریں گے۔ اگر عامر اچھی بولنگ سے پاکستان کو جتواسکتا ہے تو کیوں نہ کھلایا جائے۔ اس کی ٹیسٹ کی ریٹائرمنٹ پر دکھ تو ہوا تھا لیکن اب آگے بڑھنا ہے۔ میں عمر کے اس حصے میں جنید خان یا کسی اور فاسٹ بولر سے لڑائی کا سوچ نہیں سکتا، میں سلیکشن کمیٹی کا حصہ نہیں ہوں۔ جب مشورہ مانگا جاتا ہے تو مشورہ ضرور دیتا ہوں۔ وقار یونس نے کہا کہ مجھے پہلے لگا تھا کہ فاسٹ بولرز کیلئے تھوک لگائے بغیر بولنگ مشکل ہوجائے گی لیکن اب تک کوئی بڑا مسئلہ نظر نہیں آیا۔ گیند کی کوالٹی کی وجہ سے بھی اس پر اثر پڑتا ہے۔ ٹیم کامبی نیشن پر بات کرنا قبل از وقت ہوگا، مانچسٹر میں موسم اور کنڈیشنز کو دیکھ کر ہی فیصلہ کریں گے۔ کھلاڑی یہاں بھرپور جان لگارہے ہیں۔ شاہین اور نسیم کو وقار اور وسیم کا متبادل قرار دینا قبل از وقت ہوگا، دونوں میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں،توانائی بھی بھرپور ہے۔ وہ جوفرا آرچر اور مارک ووڈ سے زیادہ اسکل والے بولر ہیں۔ وقار یونس نے کہا کہ دس گیارہ سال یو اے ای میں اسپنرز کا راج رہا لیکن اب فاسٹ بولرز پر توجہ بڑھ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تین چار ماہ کرکٹ سے دوری نے پلیئرز کو رسٹی کردیا تھا۔ ٹیسٹ سیریز سے قبل بھرپور پریکٹس کررہے ہیں۔ امید ہے ٹیسٹ سیریز سے قبل ہم اس پوزیشن پر ہوں گے جہاں ہم انگلینڈ کو چیلنج کرسکیں۔
 

تازہ ترین