کیرن کو پہلی باربجلی سپلائی فراہم،علاقے میں خوشی کی لہر

تاریخ    14 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


اشرف چراغ
کپوارہ// شمالی ضلع کپوارہ کے حد متارکہ پر واقع علاقہ کیرن کو بالآخر بجلی سپلائی سے جو ڑ دیا گیا جس کی وجہ سے لوگو ں میںخوشی کی لہر دو ڑ گئی تاہم لوگو ں نے ضلع ترقیاتی کمشنر کپوارہ انشل گرگ سے مطالبہ کیا کہ وہ منڈین میں قائم رسیونگ اسٹیشن کا افتتا ح کر کے کیرن کو بجلی سپلائی فراہم کریں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اتوار کو کیرن میں قائم رسیونگ اسٹیشن کو بجلی سپلائی سے جو ڑ دیا گیا اور با ضابطہ بجلی سپلائی شروع کی گئی۔کیرن کپوارہ ضلع کا ایک دور دراز علاقہ ہے جو حد متارکہ پر واقع ہے اور آج تک بجلی سپلائی سے محروم تھا ۔علاقہ میں رہائش پذیرلوگو ں کو شام کے وقت فوج کے جنریٹرو ں سے 3گھنٹوں کیلئے بجلی سپلائی میسر ہوتی تھی ۔2107میں محکمہ بجلی نے کیرن علاقہ کو دیان دیال سکیم کے تحت بجلی سپلائی کرنے کو منظوری دی اور اس کیلئے منڈین میں ایک رسیونگ اسٹیشن کا افتاح بھی کیا گیا جبکہ میلیال سے کیرن تک ایک رضاکار تنظیم سیلپ ہیلپ گروف نے بجلی کے کھمبے اور ترسیلی لائن بچھانے کی ذمہ داری لی ۔اس گروپ کے سر براہ انجینئر بلال احمد شاہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ موسم بہار کے ودران انہو ں نے بجلی کے کھمبے نصب کئے اور ترسلی لائنو ں کو جوڑ دیا تاہم گزشتہ سال کی بھاری برف باری کی وجہ سے بجلی کے کھمبے ٹوٹ کر زمین بر گرپڑے جبکہ ترسلی لائن کو بھی کافی نقصان پہنچا جس کی وجہ سے انہیں بہت دقتو ں کا سامنا کرنا پڑا ۔انہو ں نے کہا کہ اتوار کے روز انہو ں نے میلیال کیرن تک ترسیلی لائن کو منڈین میں قائم رسیونگ اسٹیشن سے جوڑ کر بجلی سپلائی بحال کر دی ۔اس دوران کیرن میں بجلی سپلائی بحال کرنے کے ساتھ ہی مقامی لوگو ں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ۔انہو ں نے انجینئر ہلال احمد شاہ اور اُن کے ساتھیوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان نوجوان انجینئروں نے دن رات محنت کرکے علاقے کی ایک دیرینہ مانگ کو عملی جامہ پہنانے میں اپنا بھر پور کردار ادا کیا۔لوگوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر سے مطالبہ کیا کہ وہ رسیونگ اسٹیشن کا افتتاح کرنے کیلئے علاقے کا خود دورہ کریں۔مقامی لوگو ں نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ بجلی کی طرح کیرن کے دیگر مسائل کی طرف بھی توجہ دی جائے گی ۔